نشے میں دھت بااثر افراد کے لڑکی کو سربازار برہنہ کرکے قہقہے

نشے میں دھت بااثر افراد کے لڑکی کو سربازار برہنہ کرکے قہقہے
نشے میں دھت بااثر افراد کے لڑکی کو سربازار برہنہ کرکے قہقہے

  

فیصل آباد (ویب ڈیسک) کنجوانی کے علاقے میں نشے میں دھت افراد غریب لڑکی کو سربازار برہنہ کر کے قہقہے لگاتے رہے، مزاحمت پر لڑکی کی ماں اور بھائیوں پر بدترین تشددکا نشانہ بنایا جبکہ پولیس بھی بااثر ملزمان کے ساتھ مل گئی۔

تفصیلات کے مطابق نواحی آبادی شیرازی آباد کی ’ز ب‘ نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ اس کا تعلق غریب گھرانے سے ہے، 9 نومبر کو علاقہ کے بااثر افراد فاروق، ساجدوغیرہاپنے دیگر ساتھیوں کے ہمراہ مبینہ طور پر شراب پی کر اس کے گھر میں داخل ہوئے اور اس کی جواں سال بیٹی ’ش‘ کو زنا کی خاطر اغواءکرنے کی کوشش کی جس پر مذکورہ خاتون اور اس کے بیٹوں نعیم اور ندیم نے ملزمان کو روکنے کی کوشش کی تو ملزمان نے انکو شدید تشدد کا نشانہ بنایا اور اس کی بیٹی کو بالوں سے پکڑ کر گھسیٹتے ہوئے سربازار لے آئے جہاں ملزمان نے اس کے کپڑے پھاڑ کر برہنہ کردیا اور قہقہے لگاتے رہے۔

خاتون کاکہناتھاکہ وہ مقدمہ درج کروانے تھانہ گھڑھ گئی تو پولیس نے کارروائی کرنے کی بجائے بیہودہ سوالات کرکے اور ڈرا دھمکا کر اسے تھانے سے نکال دیا اور ملزمان سے مبینہ طور پر پندرہ ہزار روپے رشوت لے کر الٹا اس کے بیٹوں کے خلاف مقدمہ درج کرکے انہیں حوالات میں بند کردیا۔

مزید : جرم و انصاف