دبئی پولیس نے دنیا بھر کے موبائل صارفین کو خبردار کردیا، اگر آپ بھی پرانا موبائل فون بیچنے کا ارادہ رکھتے ہیں تو ایسا کرنے سے پہلے یہ انتہائی تشویشناک خبر ضرور پڑھ لیں

دبئی پولیس نے دنیا بھر کے موبائل صارفین کو خبردار کردیا، اگر آپ بھی پرانا ...
دبئی پولیس نے دنیا بھر کے موبائل صارفین کو خبردار کردیا، اگر آپ بھی پرانا موبائل فون بیچنے کا ارادہ رکھتے ہیں تو ایسا کرنے سے پہلے یہ انتہائی تشویشناک خبر ضرور پڑھ لیں

  

دبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) ماہرین متعدد بار موبائل فون صارفین کو اس حقیقت سے آگاہ کر چکے ہیں کہ اگر آپ فون سے اپنی تصاویر ختم(Delete)بھی کر دیں تو وہ دوبارہ حاصل کی جا سکتی ہیں۔ اس لیے اگر آپ چاہتے ہیںکہ آپ کی ذاتی تصاویر کوئی غیرشخص نہ دیکھے تو اپنا پرانا موبائل فون کبھی بھی فروخت نہ کریں۔ اب دبئی پولیس نے بھی اپنے شہریوں کو پرانے موبائل فونز فروخت نہ کرنے کی ہدایت کر دی ہے۔ دبئی پولیس کے شعبے جنرل ڈیپارٹمنٹ آف فرانزک سائنس اینڈ کریمنالوجی کے سربراہ لیفٹیننٹ کرنل احمد مطر المحیری کا کہنا ہے کہ آج جدید ٹیکنالوجی کے اس دور میں کئی ایسے سافٹ ویئر مارکیٹ میں موجود ہیں جو موبائل فونز کی میموری سے ختم کیا گیا مواد دوبارہ حاصل کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔لہٰذا شہری اپنا پرانا موبائل فون کبھی فروخت نہ کریں تاکہ ان کی تصاویر اور ذاتی ڈیٹا محفوظ رہے۔انہوں نے بتایا کہ گلف کوآپریشن کونسل کے رکن ممالک میں سینکڑوں لوگ اپنا پرانا موبائل فون فروخت کرکے دکانداروں اور دیگر افراد سے بلیک میل ہو چکے ہیں جنہوں نے ان کے موبائل فونز سے ان کی اور ان کے خاندان کی ذاتی تصاویر دوبارہ حاصل کر لی تھیں۔

مزید جانئے: شراب کے 50 ہزار کین سمگل کرکے سعودی عرب لیجانے کی کوشش، کہاں چھپائے گئے تھے؟ جان کر آپ ہنسنے پر مجبور ہوجائیں گے

اگر انسان موبائل فون تبدیل کرنا چاہیے تو پھر آخر پرانے فون کا کیا کرے؟ اس حوالے سے دبئی کی نیوزویب سائٹ ایمریٹس 24/7 نے کچھ موبائل فون صارفین سے یہ سوال کیا کہ وہ اپنے پرانے فونز کے ساتھ کیا کرتے ہیں؟ ویب سائٹ نے جتنی بھی اماراتی لڑکیوں سے بات کی ان سب نے کہا کہ وہ اپنے پرانے فون کو جلا دیتی ہیں، توڑ دیتی ہیں یا پھر گھر میں کسی محفوظ جگہ پر رکھ دیتی ہیں۔ خلویٰ نامی خاتون کا کہنا تھا کہ وہ اور اس کے خاندان کے تمام افراد ہر سال نیا موبائل فون خریدتے ہیں اور ہر سردیوں کے آغاز پر جب وہ تفریح کے لیے صحرا میں جاتے ہیں اور وہاں رات کے وقت آگ جلاتے ہیں تو اپنے پرانے موبائل فونز اس آگ میں پھینک کر جلا دیتے ہیں۔الطھری نامی لڑکی کا کہنا تھا کہ وہ، اس کی دو بہنیں اور والدہ ہر سال فون تبدیل کرتی ہیں اور اپنے پرانے موبائل فونز کو ہتھوڑے کے ساتھ توڑ دیتی ہیں۔ اس نے بتایا کہ ہمارے خاندان میں صرف لڑکیاں اپنے فونز توڑتی ہیں۔ مرد اپنے پرانے فونز ہمارے گھریلوملازمین اور ڈرائیورز کو دے دیتے ہیں۔فوزیہ نامی خاتون کا کہنا تھا کہ وہ اپنے پرانے فون ایک باکس میں رکھ دیتی ہے۔ اس کے پاس اب تک 8فون جمع ہو چکے ہیں مگر وہ تاحال یہ فیصلہ نہیں کر سکی کہ انہیں توڑ ڈالے یا سلامت رہنے دے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس