میاں بیوی میں علیحدگی کے باعث بچوں کی تحویل کے مقدمات کی تعداد25 ہزار تک پہنچ گئی

میاں بیوی میں علیحدگی کے باعث بچوں کی تحویل کے مقدمات کی تعداد25 ہزار تک پہنچ ...

 لاہور(نامہ نگار)لاہور میں والدین کے گھریلو جھگڑوں اورمیاں بیوی میں علیحدگی کے باعث بچوں کی تحویل کے مقدمات کی تعداد 25ہزار تک پہنچ گئی جن میں 35ہزار کی تعداد میں بچوں کی تحویل کا معاملہ اٹھایا گیا ہے ،ایک سروے کے مطابق ماں اور باپ کی ناچاقی کے باعث الگ ہونے والے یہ 35ہزار بچے ڈپریشن کا شکار ہیں۔ ایوان عدل میں والدین بچوں کومصنوعی مسکراہٹ کے ساتھ کھیلتا ہوا دیکھتے رہے،گھریلو ناچاقی میں روز بروز اضافے کی وجہ سے گارڈین کی 5عدالتوں کی تعداد بھی بڑھا کر 7کردی گئی ہے۔ گارڈین عدالتوں نے اس سال کے دوران اب تک 25ہزار بچوں کوعبوری طور پر والد، والدہ، دادا، اور دادی کے حوالے کیا ہے ۔ اکثر والدین عدالت کے حکم پر بچوں کی ایک دوسرے سے ملاقات کرانے ایوان عدل لاتے ہیں۔ بعض والدین کا کہنا تھا کہ ان کے جھگڑوں کی وجہ سے بچوں کا مستقبل تباہ ہو رہا ہے۔ جبکہ ایک سروے کے مطابق ماں اور باپ کی ناچاقی کے باعث الگ ہونے والے 35ہزار بچے ڈپریشن کا شکار ہیں۔ہرہفتہ کے روز ایوان عدل میں 30کے قریب بچوں کے والدین اور دادا دادی سے ملاقات کرائی جاتی ہے ۔ مخصوص برآمدے میں باقاعدہ بچوں کی ملاقات کا انتظام کیا گیا ہے جہاں بچے والدین کی طرف سے دیئے گئے تحائف سے کھیلتے ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4