خسارے سے دوچار مختلف کمرشل ادارے، بینک اور کمپنیاں مستقل بند

خسارے سے دوچار مختلف کمرشل ادارے، بینک اور کمپنیاں مستقل بند

لاہور(شہباز اکمل جندران) وفاقی حکومت نے کابینہ ڈویژن ، فنانس ڈویژن ، وفاقی وزارت صنعت، وفاقی وزات بین الصوبائی امور اور وفاقی وزارت اوورسیز اور ہیومن ریسورس ڈویلپمنٹ کے ماتحت خسارے میں چلنے والے مختلف کمرشل ادارے، بینک اور کمپنیاں مستقل بند کردیں۔ سفید ہاتھی بننے والے ان اداروں اور کمپنیوں کے اثاثہ جات کی نیلامی کا عمل شروع کردیا گیا ہے۔ایک وفاقی ادارے کی رپورٹ کے مطابق وفاقی حکومت نے گزشتہ چند برسوں کے دوران خسارے میں چلنے والے متعدد سرکاری اداروں ، کمپنیوں ا ور بینکوں کو مستقل طورپر بند کردیا ہے۔ اور ان کے اثاثوں کی نیلامی کا عمل شروع کردیا گیا ہے۔بتایا گیا ہے کہ کابینہ ڈویژن ، فنانس ڈویژن ، وفاقی وزارت صنعت،وفاقی وزات بین الصوبائی امور اور وفاقی وزارت اوورسیز و انسانی حقوق کے ماتحت کئی ادارے خسارے میں چل رہے تھے۔اور جب تمام کاوشوں کے باوجود ان اداروں میں بہتری نہ لائی جاسکی تو حکومت نے ان سفیدہاتھیوں سے جان چھڑانے کا فیصلہ کر لیا۔ذرائع کے مطابق مستقل طورپر بند کئے جانے والے وفاقی سرکاری اداروں اور ان کے ذیلی اداروں میں کابینہ ڈویژن کے ماتحت ، ایوی ایشن ڈویژن کے ذیلی ادارے ،اور پی آئی اے کی سب کمپنی مڈوے ہاوس پرائیویٹ لمیٹیڈ ،فنانس ڈویژن کے ماتحت کام کرنے والی کمپنی ایگریکلچر ل مارکیٹنگ اینڈ سٹوریج پرائیویٹ لمیٹیڈ ، اور فیڈرل بینک فار کو آپریٹوز ، وفاقی وزارت صنعت کے ماتحت کام کرنے والی کمپنی پاکستان آٹو موبائل کی ذیلی کمپنی پاکستان موٹر کار کمپنی لمیٹیڈ ، ری پبلک موٹرز لمیٹیڈ ، سٹیٹ سیمنٹ کارپوریشن آف پاکستان لمیٹیڈ کی ذیلی کمپنی ایسوسی ایٹیڈ سیمنٹ لمیٹیڈ روہڑی،وفاقی وزارت بین الصوبائی امور کے ماتحت کام کرنے والی کمپنی پی ٹی ڈی سی موٹلز ساؤتھ پرائیویٹ لمیٹیڈ ، مالم جبہ ریزارٹ لمیٹیڈ ،اور وفاقی وزارت اوورسیرز پاکستانیز و ہیومن ریسورس ڈویلپمنٹ کے ماتحت کام کرنے والی کمپنی کاغان برک ورکس لمیٹیڈ اور دیگر کمپنیوں و ادارے شامل ہیں۔

مزید : صفحہ آخر