علی گڑھ کی اراضی پر مارکیٹ کی تعمیر ، بیشتر دکانیں فروخت

علی گڑھ کی اراضی پر مارکیٹ کی تعمیر ، بیشتر دکانیں فروخت

ملتان(جنرل رپورٹر)پنجاب ہاؤسنگ اینڈ ٹاؤن پلاننگ ایجنسی ملتان ریجن کے افسران اور عملہ کی ملی بھگت سے علیگڑھ کالج کی مقبوضہ اراضی پر قائم غیر قانونی مارکیٹ کی بیشتر دکانوں کو فروخت کر دیا گیا باوثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ یہ دکانیں سادہ لوح افراد کو 25سال کے لئے لیز پر 30سے35لاکھ روپے(بقیہ نمبر29صفحہ12پر )

کے عوض دی جا رہی ہیں اور محکمہ پھاٹا اس معاملے پر مکمل خاموشی اختیار کئے ہوئے ہے جس کی وجہ سے علیگڑھ کالج کی انتہائی قیمتی اراضی کا غیرقانونی طریقے سے استعمال کیا جا رہا ہے اور جو لوگ اس اراضی کو آگے لیز پر دے رہے ہیں وہ لوگوں سے فراڈ کر کے ان سے اب تک کروڑوں روپے بٹور چکے ہیں ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ اب تک اس مقبوضہ اراضی پر بنائی جانے والی غیر قانونی مارکیٹ کی 9دکانیں فروخت کی جا چکی ہیں اور تین دکانوں کا باقاعدہ دھڑلے سے افتتاح بھی کیا جا چکا ہے اس بارے میں ڈائریکٹر پنجاب ہاؤسنگ اینڈ ٹاؤن پلاننگ ایجنسی ملتان ریجن طاہر جاوید انصاری نے روزنامہ’’پاکستان ‘‘سے بات چیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ میں نے جب تک اس ایشو پر کام کیا پوری ایمانداری کے ساتھ کیا اب یہ معاملہ ہمارے ڈپٹی ڈائریکٹر رانا طارق خود دیکھ رہے ہیں جب ڈپٹی ڈائریکٹر رانا طارق سے بات کی گئی تو انہوں نے اپنے موقف میں بتایا کہ میری تعیناتی کو ابھی ایک ماہ ہی ہوا ہے لیکن میری پوری کوشش ہے کہ میں اس سرکاری اراضی سے قبضہ واگذار کرواؤں اور لوگوں سے بھی اپیل کرتا ہوں کہ ان دکانوں کی خرید و فروخت میں کسی کی بھی چکنی چپڑی باتوں میں نہ آئیں فی الحال یہ معاملہ عدالت میں ہے جیسے ہی معزز عدالت ہمارے حق میں فیصلہ سناتی ہے تو اس غیر قانونی کمرشل اراضی کو مسمعار کر دیا جائے گا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر