سلامتی کونسل میں داعش کیخلاف عالمی اتحاد بنانے کی منظوری

سلامتی کونسل میں داعش کیخلاف عالمی اتحاد بنانے کی منظوری
سلامتی کونسل میں داعش کیخلاف عالمی اتحاد بنانے کی منظوری

  

جنیوا (ویب ڈیسک) اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں تمام بڑی طاقتیں داعش کیخلاف عالمی اتحاد بنانے پر متفق ہوگئی ہیں۔ پیرس حملوں کے بعد سلامتی کونسل نے داعش کیخلاف عالمی اتحاد بنانے کی منظوری دیدی۔ سلامتی کونسل میں فرانس کی پیش کردہ قرار داد متفقہ طور پر منظور ہوئی جس میں کہا گیا ہے کہ داعش دنیا کے امن و سکیورٹی کے لیے ایک غیر معمولی خطرہ ہے جسے کچلنا ضروری ہے ، تمام ممالک متحدہ ہو کر داعش کیخلاف جنگ میں شامل ہوں، داعش کے خلاف کاروائیاں دگنی کرنے کا بھی کہا گیاہے۔ قرار داد میں زور دیا گیا ہے کہ دہشت گرد تنظیم داعش کو مزید حملوں سے روکا جائے ۔ داعش کے مالی وسائل کو محدود کیا جائے، قرار داد میں کہا گیا کہ شام کی سرزمین پر داعش کے خلاف تمام ترفوجی اقدامات کیلئے صدر بشارالا سد سے رابطہ کیا جائے گا، قرارداد میں پیرس حملوں کے ساتھ ساتھ بیروت ، تیونس، ترکی اور مصر میں دہشت گرد حملوں کی بھی مذمت کی گئی ۔ فرانسیسی صدر فرانسو اد لاند نے قرار داد کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ قرارداد کی منظوری سے داعش کیخلاف تمام ممالک کو متحرک کرنے میں مدد ملے گی۔ امریکہ نے بھی قرار داد کا خیر مقدم کیا ہے۔ داعش نے پیرس میںحملے کر کے 130 افراد کو ہلاک کر دیا تھا۔

مزید : بین الاقوامی