افسران کی اضافی ڈیوٹیاں ، لینڈ ریکارڈ کی درتگی کا کام نظر انداز سائل سراپاء احتجاج

افسران کی اضافی ڈیوٹیاں ، لینڈ ریکارڈ کی درتگی کا کام نظر انداز سائل سراپاء ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور (عامر بٹ سے)بورڈآف ریونیو کی جانب سے صوبے بھر میں لینڈ ریکارڈ انفارمیشن سسٹم سروس سنٹرز کی مانیٹرنگ ،انسپکشن اور ریکارڈ کی درستگی کیلئے سونپی جانے والی ذمہ داریاں اضافی ڈیوٹیوں کے باعث نظر انداز کر دی گئیں،اسسٹنٹ کمشنر ز کو دی جانے والی چیئرمین شپ سوالیہ نشان بن گئی،کمیٹیاں غیر فعال قرار دیدی گئیں ،کمیپیوٹرسروس سنٹر میں درپیش مسائل بروقت حل ہونے کی بجائے عوام کیلئے وبال جان بن گئے ،شہریوں کاشدید احتجاج،سینئر ممبر بورڈآف ریونیو سے نوٹس لینے کی اپیل کی گئی ہے،روزنامہ پاکستان کی جانب سے کئے جانے والے سروے کے دوران کچہریوں اور کمپیوٹر سروس سنٹرز آنے والے سائلین کی بڑی تعداد کمپیوٹرسروس سنٹرز میں پائی جانے والی خامیوں ریکارڈ میں ہونے والی خود ساختہ درستگیوں اور سروس سنٹر ز میں اپنائی جانے والی پالیسیوں کے خلاف سراپا احتجاج بنی دکھائی دی ۔شہری محمد رمضان ،اللہ دتہ ،ارسلان ڈوگر،خرم شہزاد اور وقاص علی نے آگاہی دی کہ پنجاب بھر میں اسسٹنٹ کمشنر ز کو سرو س سنٹرز میں درپیش مسائل کے ازالہ کیلئے چیئرمین منتخب کیا گیا ہے جس کو سروس سنٹرز میں درپیش تمام مسائل کے حل کیلئے اختیار بھی دیا گیا ہے تاہم اضافی ڈیوٹی کی وجہ سے اسسٹنٹ کمشنر ز کی عدم دستیابی کے باعث شہری کبھی اسسٹنٹ کمشنر آفس کبھی ٹاؤن ایڈمنسٹریٹر آفس تو کبھی سروس سنٹر کے اردگرد چکر کاٹنے پر مجبور ہو چکے ہیں ،اسسٹنٹ کمشنرز کے پا س ٹاؤن کی ایڈمنسٹریشن اور ڈی ڈی او رجسٹریشن کی اضافی ذمہ داریاں ہونے کے سبب تمام تر مصروفیت بھی انہی پرکشش سیٹوں کی جانب مبذول ہو چکی ہے اس کے علاوہ کبھی آگاہی ملتی ہے کہ اسسٹنٹ کمشنر صاحب فیلڈ ڈیوٹی میں مصروف ہیں کبھی جمعبندیوں کی میٹنگ تو کبھی سیٹلمنٹ کی تکمیل میں مصروف ہیں جس کی وجہ سے عوام کے بروقت ہونے والے کام بھی کئی ماہ تک التواء میں ڈالے جارہے ہیں شہری محسن بلال،عدنان علی،عاطف بٹ،قاسم شاہ نے آگاہی دی کہ پنجاب بھر کے کمپیوٹر سروس سنٹر زکا معائنہ کر لیا جائے تو تمام حقیقت عیاں ہو جائے گی کہ اسسٹنٹ کمشنر ز کی جانب سے کتنے وزٹ کئے گئے ہیں ،کمپیوٹر سروس سنٹرز میں جاتے ہیں تو اسسٹنٹ ڈائر یکٹر لینڈ ریکارڈ اور سروس سنٹر انچارج اپنے محدود اختیار کا رونا روتے ہوئے اسسٹنٹ کمشنرآفس میں جانے کی ہدایت کرتے ہیں عوام کے مفادات اور ان کو درپیش مسائل کے حل کیلئے اسسٹنٹ کمشنر کو چیئرمین شپ دی گئی تھی جو کہ مکمل طور پر غیر فعال ہے اور ان کے ممبرز جو کہ کمیٹی کی صورت میں موجود ہیں وہ بھی ریکارڈ میں درستگی کا کوئی اختیارنہیں رکھتے ،کمپیوٹر سروس سنٹر میں لنک ڈاؤن کی وجہ سے انتقال پینڈنگ ڈال دیئے جاتے ہیں کئی کئی ہفتے تک پرچہ رجسٹری کمپیوٹر سروس سنٹر میں نہیں پہنچائی جاتی جس کی وجہ سے مالک اراضی کے انتقالات کا اندراج نہیں کیا جارہا ۔ 2بجے کے بعد عوام کو کمپیوٹر سروس سنٹرز سے باہر دھکیل کر تالے لگا دئیے جاتے ہیں جو کہ انتہائی غیر مناسب عمل ہے جس سے شہریوں کی تذلیل کی جارہی ہے۔ شہریوں نے سینئر ممبر پنجاب بورڈ آف ریونیو جواد رفیق ملک سے فوری نوٹس لینے کی اپیل کی ہے۔