پورا خاندان پیسے ہونے کے باوجود جوتے نہیں پہن سکتا

پورا خاندان پیسے ہونے کے باوجود جوتے نہیں پہن سکتا
پورا خاندان پیسے ہونے کے باوجود جوتے نہیں پہن سکتا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


نئی دلی (نیوز ڈیسک )بھارتی شہر گایا کے ایک دور دراز قصبے میں رہنے والے محنت کش کرشنا کے ہاتھوں اور پیروں پر جیسے ہی کسی کی نظر پڑتی ہے تو وہ حیرت اور خوف سے اچھل پڑتا ہے کیونکہ اس شخص کے دونوں ہاتھوں اور پیروں کی پانچ کی بجائے چھ انگلیاں ہیں۔ مزید حیرت کی بات یہ ہے کہ صرف کرشنا ہی نہیں بلکہ اس کے باپ دادا کا بھی یہی حال تھا، اور اب اس کے بہن بھائیوں بچوں اور پوتوں پوتیوں کو بھی یہی مسئلہ لاحق ہے۔میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق کرشنا اور اس کا خاندان جینیاتی خرابی پولی بیکٹرلی کا شکار ہے اور یہ مسئلہ ان میں نسل در نسل منتقل ہو رہا ہے۔ کرشنا تو اس مشکل کے مطابق ڈھل چکا ہے لیکن اس کے بچے طرح طرح کے مسائل سے دو چار ہیں۔ چھ انگلیوں کی وجہ سے ان کیلئے ہاتھ میں قلم پکڑنا اور اپنے روزمرہ کے کام درست طور پر سرانجام دینا بہت مشکل ہے۔ اس خاندان کو اپنے لیے خصوصی جوتے تیار کروانے پڑتے ہیں کیونکہ بازار میں دستیاب عام جوتے ان کیلئے تکلیف کا باعث بنتے ہیں۔اس خاندان کی لڑکیاں سب سے زیادہ مصیبت میں مبتلا ہیں۔ دیگر تمام مسائل کے علاوہ انہیں شادی سے محرومی کا مسئلہ بھی درپیش ہے کیونکہ کوئی بھی چھ انگلیوں والی لڑکیوں سے شادی پر تیار نہیں۔ کرشنا کا کہنا ہے کہ انہوں نے کئی ڈاکٹروں سے رابطہ کیا ہے لیکن اب تک زیادہ سے زیادہ یہی ہوسکا کہ ان کی بیماری کا پتا چل گیا، تاہم اس کا کوئی علاج انہیں تاحال میسر نہیں ہو سکا۔
جوتے نہیں پہن سکتا

مزید :

صفحہ آخر -