سندھ اسمبلی کا اجلاس شہداء کربلا کے چہلم کے احترام میں ملتوی

سندھ اسمبلی کا اجلاس شہداء کربلا کے چہلم کے احترام میں ملتوی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


کراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ اسمبلی کا اجلاس پیر کو تلاوت قران پاک اور فاتحہ خوانی کے بعد ایجنڈے کی مزید کسی کارروائی پر غورکے بغیر منگل کی صبح 10بجے تک ملتوی کردیا گیا۔ سندھ اسمبلی کا اجلاس اسپیکر آغا سراج درانی کی زیر صدارت صبح 10کے مقررہ وقت کے بجائے ایک گھنٹے کی تاخیر سے صبح 11بجے شروع ہوا ۔ تلاوت کلام پاک کے بعد شہدا ئے کربلا اور پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنمامخدوم امین فہیم مرحوم اور دیگر مرحومین کے لیے فاتحہ خوانی کی گئی جس کے بعد صوبائی وزیرپارلیمانی امور نثار کھوڑو نے اس امر کی نشاندہی کی کہ آج سید الشہدا حضرت امام حسین رضی اللہ تعالٰی عنہ کا چہلم اس لئے درخواست ہے کہ چہلم کے احترام میں اجلاس ملتوی کردیا جائے۔ اسپیکر کی ہدایت پر وزیرپارلیمانی امور نے اجلاس ملتوی کرنے کی قرارداد پیش کی جسے ایوان نے منظور کرلیا اور اسپیکر نے ایوان کی کارروائی منگل کی صبح 10بجے تک ملتوی کردی۔ وزیر پالیمانی امور سید الشہد امام اعلی مقام ا اور ان کے ساتھیوں کی میدان کربلا میں پیش کی جانے والی عظیم الشان قربانی پر انہیں شاندار نذرانہ عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ ہم ان عظیم ہستیوں کی عظیم جدوجہد کو سلام پیش کرتے ہیں ۔ نثار کھوڑو نے کہا کہ منگل کو ایوان میں پرائیوٹ ممبرز ڈے ہے اس لئے پیر کے روز موخر کئے جانے والے ایجنڈے پر بدھ کو غور کیا جائے گا۔پیر کو ایوان کی کاررائی محض 20منٹ تک جاری رہی جس کے بعد اجلاس ملتوی کردیا گیا ۔ سندھ اسمبلی کے بہت سے ارکان اس وقت سندھ اسمبلی پہنچے جب اجلاس کی کاررائی ختم ہوچکی تھی۔