وینٹیج کار ریلی میچنی پوسٹ لنڈی کوتل پر اختتام پذیر

وینٹیج کار ریلی میچنی پوسٹ لنڈی کوتل پر اختتام پذیر

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


خیبر ایجنسی ( بیورورپورٹ)وینٹیج کار ریلی میچنی پوسٹ لنڈی کوتل پر اختتام پذیر ہوئی ، 75پرانی کاروں کی ریلی 11 نومبر کو کراچی سے شروع ہوئی تھی، میچنی پوسٹ تک بیس کاریں آئیں، کمانڈنٹ خیبر رائفلز نے ریلی کے شرکاء کا استقبال کیا ، آفیسرز میس میں مہمانوں کو ظہرانہ دیا گیا ، ریلی کا مقصد امن کا پیغام دینا ہے ، کرنل عمر فاروق اور عاصم درانی کی میڈیا سے گفتگو۔ 11 نومبر کو کراچی سے شروع ہونے والی وینٹیج کار ( پرانی کاریں ) ریلی پیر کے روز لنڈی کوتل کی تاریخی میچنی پوسٹ پر اختتام پذیر ہوئی ریلی کا مقصد امن کا پیغام دینا تھا جس کا اہتمام وینٹیج کلاسک کار کلب آف پاکستان نے کیا تھا ریلی کے منتظم عاصم درانی نے بتایا کہ پہلے کار ریلی کراچی سے شوع ہو کر پشاور میں اختتام پذیر ہوتی تھی لیکن اس بار کراچی سے خیبر تک اس کا اہتمام کیا گیا تاکہ فاٹا آؤٹ لوگوں کو یہ پیغام دیا جا سکے کہ فاٹا میں امن لوٹ آیا ہے اور راستے محفوظ ہیں اور کسی قسم کا کوئی خطرہ نہیں انہوں نے کہا کہ ریلی میں مختلف صوبوں کے لوگوں نے بڑھ چڑھ کر حصہ لیا اور خواتین بھی اس ریلی میں شامل تھیں اور کہا کہ کراچی سے دس کاریں ، چل پڑی تھیں ، لاہور میں دس ، اسلام آباد میں پچیس اور پشاور میں چالیس مذید کاریں اس ریلی میں شامل ہوئیں اور میچنی پوسٹ لنڈی کوتل پر بیس کاریں پہنچی جس کے شرکاء بہت خوش دکھائی دےئے اس موقع پر کمانڈنٹ خیبر رائفلز کرنل عمر فاروق نے شرکاء ریلی کو خوش آمدید کہا اور میڈیا کو بتایا کہ وینٹیج کار ریلی کا مقصد امن کا پیغام دینا تھا انہوں نے کہا کہ آئی جی ایف سی کے حکم پر انہوں نے شرکاء ریلی کی مہمان نوازی کی اور تمام راستے پر ریلی کو مکمل سیکیورٹی فراہم کی انہوں نے کہا کہ الحمد اللہ فاٹا میں امن واپس لوٹ آیا ہے یہ ساتویں کار ریلی تھی ، خاصہ دار فورس کے دستے بھی تمام راستوں پر چوکس کھڑے کر دےئے گئے تھے تاہم پولیٹیکل انتظایہ کے آفسران اس موقع پر موجود نہیں تھے خیبر پاس پر جگہ جگہ لوگوں اور خاص کر طلباء نے مختلف جگہوں پر ریلی کا استقبال کیا ۔۔۔۔