سندھ ہائیکورٹ نے مشیر قانون مرتضیٰ وہاب کی تقرری غیر قانونی قرار دیدی ، عہدہ چھوڑنے کا حکم

سندھ ہائیکورٹ نے مشیر قانون مرتضیٰ وہاب کی تقرری غیر قانونی قرار دیدی ، عہدہ ...
سندھ ہائیکورٹ نے مشیر قانون مرتضیٰ وہاب کی تقرری غیر قانونی قرار دیدی ، عہدہ چھوڑنے کا حکم

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک ) سندھ ہائی کورٹ نے مشیر قانون سندھ مرتضیٰ وہاب کی تقرری کو غیر قانونی قرار دیدیا۔

ابتک نیوز کے مطابق سندھ ہائی کورٹ نے مشیر قانون سندھ مرتضیٰ وہاب کی تقرری کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے عہدہ چھوڑنے کا حکم سنا دیا ہے جبکہ انہیں کابینہ اجلاس میں شرکت سے بھی روک دیا گیا ہے ۔

چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ نے سانحہ بارہ مئی کیس کی سماعت سے انکار کردیا 

سندھ ہائی کورٹ میں ایک درخواست کی سماعت ہوئی جس میںموقف اختیار کیا گیا تھا کہ مرتضیٰ وہاب صرف معاونت کر سکتے ہیں مگر بطور مشیر تقرری غیر قانونی ہے ۔ درخواست گزار کا کہنا تھا کہ مشیرصرف وزیراعلیٰ کی معاونت کرسکتاہے وزارت نہیں چلاسکتا۔غیرمنتخب شخص کووزیرکااختیاردیناغیرآئینی ہے جسے کالعدم قرار دیا جائے جس پر عدالت نے آج فیصلہ سنادیا ہے ۔