انٹرن شپ‘ نوکری کا حصول‘ جامعہ اسلامیہ اور چیمبر آف کامرس کے مابین معاہدہ

    انٹرن شپ‘ نوکری کا حصول‘ جامعہ اسلامیہ اور چیمبر آف کامرس کے مابین ...

  



بہاول پور(بیورورپورٹ‘ڈسٹرکٹ رپورٹر) بہاولپور اور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر جاوید اقبال چوہدری کی دعوت پر اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر اطہر محبوب نے بہاولپور چیمبر کا وزٹ کیا۔ ان کے ہمراء یونیورسٹی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے ڈینز اور دیگر پروفیسر حضرات شامل تھے۔ اس موقع پر بہاولپور چیمبر کے سینئر نائب صدر احمد بلال، نائب صدر محمد الیاس خان، سابق صدور چیمبر و اراکین ایگزیکٹو کمیٹی بھی موجود تھے۔ ملاقات کے دوران صدر چیمبر(بقیہ نمبر14صفحہ12پر)

جاوید اقبال چوہدری نے بتایا کہ بہاولپور چیمبر خصوصی طور پر انڈسٹری اکیڈمیا لنکجز پر کام کر رہا ہے اور اسی مقصد کے لیے بہاولپور چیمبر اور اسلامیہ یونیورسٹی کے مابین روابط کو مضبوط کرنا ہے۔ اسی مقصد کے لیے بہاولپور چیمبر اور اسلامیہ یونیورسٹی کے مابین ایک مفاہمتی یاد داشت (MOU) پر دستخط بھی کیے گئے۔ اس MOUکے ذریعے انڈسٹری اکیڈمیا لنکجز، یونیورسٹی کے طلباء کے لیے انٹرن شپ اور جاب کے حصول کے مواقع، ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ کا فروغ، انٹرپرینیور شپ، یونیورسٹی کے مختلف ڈپارٹمنٹ کے ساتھ روابط، اس کے علاوہ دونوں اداروں کے مابین باہمی تعاون کا فروغ جبکہ اکیڈمیا کی جانب سے انڈسٹری کے لیے جدید نصاب تعلیم کے ساتھ ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ میں تعاون حاصل کیا جائے گا۔ اس کے ساتھ ساتھ دونوں اداروں میں ہونے والی کانفرنس، سیمینارز، ایگزی بیشن و پروگرامز میں شمولیت کو بھی یقینی بنایا جائے گا جبکہ طلباء و طالبات کی کیئر کونسلنگ کے ساتھ ساتھ انہیں ٹیکنیکل ٹریننگ کے مواقع بھی فراہم کیے جائیں گے۔وائس چانسلر نے بہاولپور چیمبر اور IUB کے مابین ہونے والے MOU پر اظہار تحسین کرتے ہوئے کہا کہ اس سے دونوں اداروں کے مابین ماہرانہ مشاورت کو فروغ حاصل ہوگا اور دونوں ادارے اس سے مستفید ہونگے۔ انہوں نے بہاولپور چیمبر کی صنعتی و تاجر برادری کی جانب سے جنوبی پنجاب کی معیشت کی بڑھوتری کے لیے کی جانے والی کوششوں کو بھی سراہا۔ ملٹی میڈیا کے ذریعے بہاولپور چیمبر کے قیام اور علاقے کی دیگر انڈسٹری کے ساتھ ساتھ زیر تعمیر بہاولپور انڈسٹریل اسٹیٹ کے بارے میں بھی مکمل بریفنگ دی گئی۔ تقریب کے آخر میں مہمانوں کے اعزاز میں چیمبر کی یاد گاری شیلڈز پیش کی گئیں۔

معاہدہ

مزید : ملتان صفحہ آخر