سٹاک مارکیٹ میں مندی کارجحان، سونااورڈالر سستا

سٹاک مارکیٹ میں مندی کارجحان، سونااورڈالر سستا

  



کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان سٹاک ایکسچینج میں مسلسل دوسرے روز بھی مندی کے بادل چھائے رہے، کے ایس ای100انڈیکس مزید 936.37 پوائنٹس کمی سے37101.31پوائنٹس کی سطح پر آگیا،جس کے نتیجے(بقیہ نمبر45صفحہ12پر)

میں سرمایہ کاروں کوایک کھرب ارب42ارب 4کروڑ16لاکھ روپے سے زائدکا نقصان اٹھانا پڑا۔ جمعرات کوکاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہونے پرکے ایس ای100انڈیکس 38095پوائنٹس کی سطح پرپہنچ گیاتاہم بعد ازاں سیاسی افق پر بے یقینی کی کیفیت کے باعث فروخت کا دباؤبڑھ گیا،جس سے 100انڈیکس37033پوائنٹس کی نچلی سطح پرآ گیا۔مارکیٹ کے اختتام پرکے ایس ای100انڈیکس936.37پوائنٹس کی کمی سے37101.31پوائنٹس پر بندہوا۔مارکیٹ میں مجموعی طورپر384کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہواجن میں سے69کمپنیوں کے حصص کے بھاؤمیں اضافہ 304کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں کمی جبکہ11کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں استحکام رہا۔دوسری جانب بین الاقوامی گولڈ مارکیٹ میں 7ڈالرکی کمی سے فی اونس سونے کی قیمت گھٹ کر1469ڈالرہوگئی،جس کے نتیجے میں مقامی صرافہ مارکیٹوں میں بھی فی تولہ سونا350روپے سستاہوگیا۔آل کراچی صراف اینڈجیولرزایسوسی ایشن کے مطابق کراچی،حیدرآباد، سکھر، ملتان، فیصل آباد، لاہور، اسلام آباد، راولپنڈی، پشاور اور کوئٹہ کی صرافہ مارکیٹوں میں فی تولہ سونے کی قیمت86200روپے سے گھٹ کر85850روپے اوردس گرام سونے کی قیمت73903روپے سے گھٹ کر73603روپے ہوگئی۔علاوہ ازیں انٹربینک مارکیٹ میں پاکستانی روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالرکی قدر میں 9پیسے کی کمی ہوئی۔ اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت خرید مستحکم اور قیمت فروخت میں 10پیسے کا اضافہ ہوا۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کے مطابق گزشتہ روزانٹربینک مارکیٹ میں امریکی ڈالر کی قیمت خرید155.37روپے سے گھٹ کر155.28روپے اورقیمت فروخت155.47روپے سے گھٹ کر155.38روپے ہوگئی۔اوپن مارکیٹ میں امریکی ڈالرکی قیمت خرید155.20روپے مستحکم رہی جبکہ قیمت فروخت10پیسے کے اضافے سے بڑھ کر155.50روپے ہوگئی۔

سٹاک مارکیٹ/گولڈ/ڈالر

واشنگٹن(آن لائن)امریکی نیوز ایجنسی بلوم برگ نے کہا ہے کہ پاکستان کی اسٹاک مارکیٹ 7 ماہ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی۔بلوم برگ کی رپورٹ کے مطابق اگست میں پاکستان کی سٹاک مارکیٹ 5 سال کی کم ترین سطح پر(بقیہ نمبر46صفحہ12پر)

تھی، بیرونی سرمایہ کاروں نے سٹاک مارکیٹ میں 6 کروڑ 40 لاکھ ڈالر سرمایہ کاری کی، یہ 2014 کے بعد بیرونی سرمایہ کاروں کی سب سے بڑی انویسٹمنٹ ہے، فروری 2020 ء میں ایف اے ٹی ایف اے کے جائزہ کے بعد سٹاک مارکیٹ میں مزید سرمایہ کاری متوقع ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان نے منی لانڈرنگ کی روک تھام کیلئے کافی کام کیا ہے، لندن کی دو معروف کمپنیوں نے بھی پاکستانی سٹاک مارکیٹ میں سرمایہ کاری کی ہے۔

بلوم برگ/رپورٹ

مزید : ملتان صفحہ آخر