حکومت کی اکنامک اور فارن پالیسی مکمل طور پر ناکام ہے،مہر سلطانہ

  حکومت کی اکنامک اور فارن پالیسی مکمل طور پر ناکام ہے،مہر سلطانہ

  



پشاور(سٹی رپورٹر) پاکستان پیپلز پارٹی خواتین ونگ کی صوبائی سیکرٹری اطلاعات و سابقہ ممبر صوبائی اسمبلی مہر سلطانہ نے کہا ہے کہ حکومت کی اکنامک اور فارن پالیسی مکمل طور پر ناکام ہے جس کے باعث ہمسایہ ممالک کیساتھ ہمارے تعلقات ٹھیک نہیں ہیں جبکہ غربت اور بیروزگاری میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے غریب عوام خودکشیاں کرنے پر مجبور ہیں خصوصاً اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوان طبقے کو نوکریوں کی عدم فراہمی کے باعث شدید مایوسی کی لہر دوڑ گئی ہے۔ انہوں نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ آئے روز وزراء کی تبدیلی نے ثابت کردیا کہ سلیکٹڈ حکومت کی کابینہ نالائق بھی ہے اور یہ بھی واضح ہو گیا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان اپنی کابینہ کی جو تعریفیں کرتے ہیں وہ جھوٹ پر مبنی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان عوام کی حالت زار پر رحم کھاتے ہوئے عوام کی مفاد میں عملی اقدامات اٹھائے انہوں نے ڈیڑھ سال اپوزیشن کو این آر او نہ دینے اور الزامات میں گزار لئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شبر زیدی کے بیان نے وزیر اعظم عمران خان کے 200 ارب روپے کے منی لانڈرنگ کے الزام پر پانی پھیر دیا ہے۔انہوں نے فارن فنڈنگ کیس کے حوالے سے کہا کہ دوسروں کو چور کہنے والا وزیراعظم عمران خان فارن فنڈنگ کیس میں خود پیش ہوں تاکہ دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہوجائے اور جس روز فیصلہ آئے گا تو پوری تحریک انصاف ختم ہو جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ ریاست مدینہ کا قیام تو دور کی بات ہے ہے موجودہ حکومت نے انصاف کی دھجیاں بکھیر دی ہیں جس کی واضح مثال سانحہ ساہیوال کیس ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر