مہمند،اراضی سرکاری تحویل میں لیکر ادائیگی نہ کرنے پر ریکارڈ طلب

مہمند،اراضی سرکاری تحویل میں لیکر ادائیگی نہ کرنے پر ریکارڈ طلب

  



پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ نے قبائلی کی اراضی سرکاری تحویل میں لے کرادائیگی کئے بغیرتعمیراتی کام شروع کرنے پر اسسٹنٹ کمشنرمہمند سے ریکارڈ مانگ لیاہے عدالت عالیہ کے چیف جسٹس وقاراحمدسیٹھ اور جسٹس نعیم انورپرمشتمل دورکنی بنچ نے یہ احکامات گذشتہ روز احمدنامی قبائلی کی جانب سے دائررٹ پرجاری کئے اس موقع پرعدالت کوبتایاگیاکہ درخواست گذارکی اراضی ضلع مہمند کی انتظامیہ نے لے لی ہے اوراس پرتعمیراتی کام بھی شروع کردیاگیاہے جبکہ درخواست گذار کو اراضی کی قیمت تاحال ادا نہیں کی گئی ہے اس موقع پر ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل نے عدالت کو بتایا کہ کمیونٹی کے مشران کو ادائیگی کی گئی ہے جبکہ درخواست گذار کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ کوئی ادائیگی نہیں ہوئی انفرادی طور پر اور نہ ہی قبیلے کوجس پرفاضل بنچ نے اسسٹنٹ کمشنرمہمندکونوٹس جاری کرتے ہوئے اگلی پیشی پرریکارڈ طلب کرلیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر