صوبہ سندھ میں ایکس ڈی آر ٹائیفائیڈ وبائی صورت اختیار کرگیا

صوبہ سندھ میں ایکس ڈی آر ٹائیفائیڈ وبائی صورت اختیار کرگیا

  



کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) طبی ماہرین نے خبردار کیا ہے سندھ میں ایکس ڈی آر ٹائیفائیڈ کے کیسز سرکاری اعدادوشمار سے کہیں زیادہ ہیں، والدین بچوں کو حفاظتی ویکسین ضرور لگوائیں۔تفصیلات کے مطابق سندھ میں ڈرگ ریزسٹینس ٹائیفائیڈ کی خطرناک وبا ء نے ہزاروں بچو ں کو بیمار کردیا۔ سرکاری اعدادوشمار کے مطابق صوبے بھرمیں ایکس ڈی آر ٹائیفائیڈ کے 13 ہزار کیس رپورٹ ہوئے لیکن ماہرین کہتے ہیں اصل تعداد تین گنا زیادہ ہے۔طبی ماہرین کہتے ہیں پینے کا گندا پانی، آلودگی اور اینٹی بائیوٹک ادویات کا بے دریغ استعمال اس مہلک ٹائیفا ئیڈ کی وجہ ہیں۔ ٹائیفائیڈ ویکسین کے کوئی مضراثرات نہیں بلکہ یہ ویکسین بچوں کو پانچ سال تک مہلک مرض سے محفوظ رکھتی ہے۔دواؤں کیخلاف مزاحمت کرنیوالے ٹائیفائیڈ کی اس قسم کیخلاف عام اینٹی بائیوٹک دوا کارگر ثابت نہیں ہو رہیں۔

ایکس ڈی ٹائیفائیڈ

مزید : صفحہ آخر