اپوزیشن کی رہبر کمیٹی کاآج ملک گیر احتجاجی مظاہروں کااعلان 

اپوزیشن کی رہبر کمیٹی کاآج ملک گیر احتجاجی مظاہروں کااعلان 

  



اسلام آباد (سٹاف رپورٹر،مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) اپوزیشن کی رہبر کمیٹی نے آج ملک بھر میں جلسے اور جلوسوں کا اعلان کر دیا۔کنوئیر رہبر کمیٹی اکرم درانی کا کہنا تھا عوام کو جلد ہی خوشخبری ملے گی، تمام ادارے حکومت سے مایوس ہوچکے ہیں۔یہ اعلان اور ان خیالات کا اظہارانہوں نے گزشتہ روز آ مدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں عبوری ضمانت میں توسیع کےلئے اسلام آباد ہائی کورٹ میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو میں کیا۔ اکرم درانی کا مزید کہنا تھا عمران خان اخلاقی طور پر وزارت عظمیٰ سے مستعفی ہوں، پی ٹی آئی فارن فنڈ نگ میں عدالتوں کے پیچھے چھپنے کا معاملہ ختم ہوا، الیکشن کمیشن کے فارن فنڈنگ کیس کے بعد عمران خان کی پارٹی ختم ہو جائےگی۔ کسان، تاجر، ڈاکٹر سب احتجاج کر رہے ہیں، د ھر نے کا مقصد اور فائدہ جلد عوام کے سامنے آجائے گا، شہباز شریف جلد ہی وطن واپس آئیں گے، نواز شریف بیمار بیوی کو چھوڑ کر وطن واپس آئے، بیماری پر گپ شپ لگائی جا رہی ہے، بہت سے لوگ ابھی ٹی وی پر بیٹھ کر بیماری پر واویلا کر رہے ہیں۔ صوبائی قیادت بیٹھے گی اور پلان سی کو عملی جامہ پہنانے پر غور کرے گی۔الیکشن کمیشن کی جانب سے پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کی روزانہ سماعت کا مطالبہ منظور ہونا کمال کی بات ہے ۔

رہبر کمیٹی اعلان

 اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) اپوزیشن جماعتوں کی ضلعی قیادت کی آل پارٹیز کانفرنس( اے پی سی) نے رہبر کمیٹی کے فیصلے کی روشنی میںآج نما زجمعہ کے بعد اسلام آبادمیں احتجاج کرنے کااعلا ن کرتے ہوئے کہاہے اگر رہبر کمیٹی نے محسوس کیا تو پلان سی پر عملدرآمد شروع کیا جا سکتا ہے،آزادی مارچ کی منزل اس حکومت کا خاتمہ ہے ،مارچ کے تمام اہداف حاصل ہونگے ،اپوزیشن کی تحریک 22کروڑ عوام کے حقوق کی جنگ ہے ۔ان خیالات کااظہار مسلم لیگ (ن) کے رہنماڈاکٹر طارق فضل چوہدری کی رہائش گاہ پرمنعقدہ ضلعی اے پی سی کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے رہنماﺅںنے کیا ۔مسلم لیگ ن کے رہنماڈاکٹر طارق فضل چوہدری ، جے یو آئی کے ضلعی امیر مولاناعبدالمجید ہزاوری ، پختونخواہ ملی عوامی پارٹی رہنما حاجی عبد القیوم اچکزئی ،جمعیت اہل حدیث کے رہنماحافظ محمد مقصوداوردیگر نے کہا پلان بی کو ختم کیا گیااب جمعہ کو احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ شروع کر یں گے،ا س ضمن میں آج جمعہ کو متحدہ اپوزیشن کا پریس کلب کے سامنے تین بجے احتجاج ہوگا،اپوزیشن کی تحریک 22کروڑ عوام کے حقوق کی جنگ ہے،جولائی 2018 سے متحدہ اپوزیشن کا قیام عمل میں لایا گیا،آزادی مارچ کی شکل میں متحدہ اپوزیشن نے منظم احتجاج کیا،آزادی مارچ کا تمام کریڈٹ مولانا فضل الرحمان کو جاتا ہے،آزادی مارچ اور عمران خا ن کے دھرنے میں زمین آسمان کا فرق تھا،آزادی مارچ کے دوران شہریوں کے حقوق متاثر نہیں ہوئے،آزادی مارچ اپوزیشن کی تحریک کا نام ہے اور تحریکیں ختم نہیں ہوتیں،تمام اپوزیشن جماعتیں اپنی پالیسی کے مطابق آئندہ بھی آزادی مارچ میں شرکت کریں گی، آزادی مارچ کی منزل حکومت کا خاتمہ ہے مارچ کے تمام اہداف حاصل ہوں گے،80فیصد معیشت حکومت پر عوام کے اعتماد کی وجہ سے چلتی ہے،آج حکمران عوامی اعتماد کھو چکے ہیں،پلان بی دو سو فیصد کامیاب رہاحکومت کی جڑیں کاٹ دیں اور ان کی بنیادیں ہل چکی ہیں ،متحدہ اپوزیشن رہبر کمیٹی میں احتجاج سے متعلق فیصلے کر رہی ہے۔

اپوزیشن اے پی سی

مزید : صفحہ اول