قومی ٹیم آسٹریلیاکیخلاف آغاز سے ہی اچھا نہیں کھیلی‘سابق کرکٹرز

قومی ٹیم آسٹریلیاکیخلاف آغاز سے ہی اچھا نہیں کھیلی‘سابق کرکٹرز

  



ِلاہور(سپورٹس رپورٹر) پاکستان کی بیٹنگ آسٹریلیا کے خلاف پہلے ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں فلاپ ہی نظر آئی اور ایک مرتبہ دوبارہ پاکستان کی ٹیم بڑا سکور کرنے میں ناکام ثابت ہوئی ان خیالات کا اظہار سابق کرکٹرز نے پاک آسٹریلیا ٹیسٹ سیریز کے پہلے روز پاکستانی بیٹنگ پر اظہار خیال کرتے ہوئے کیا سکندربخت نے کہا کہ پاکستانی ٹیم نے اچھا آغاز نہیں کیا اور اسوجہ سے بڑا سکور کرنے میں ناکام ثابت ہوئی اس سے قبل بھی جب بھی پاکستان کی ٹیم نے آسٹریلوی سرزمین پر کھیلا ہے اس کو مشکلات ہی پیش آئیں ہیں پہلی اننگز میں پاکستان کی طرف سے صرف دو سو چالیس رنز بنانا ناکافی ہیں اور یہ میزبان ٹیم کے لئے ایک آسان سکور ہے جسے وہ جلد حاصل کرکے پاکستان کے خلاف ایک بڑا سکور کرنے میں کامیاب ہوجائے گی باسط علی نے کہا کہ پاکستانی بیٹنگ فلاپ نظر آئی اب پاکستانی ٹیم کے باؤلرز کو عمدہ باؤلنگ کروانے کی ضرورت ہے۔

تاکہ آسٹریلوی بیٹسمینوں کو جلد از جلد آؤٹ کرکے کھیل میں واپس آسکے اور اس کے لئے پاکستانی باؤلرز کو خاص حکمت عملی کے ساتھ میدان میں اترنے کی ضرورت ہے بلاشبہ آسٹریلیا کی ٹیم اس وقت مضبوط ٹیم ہے اور اس کے خلاف پاکستان کی کامیابی آسان نہیں ہوگی اس کے لئے کپتان اظہر علی کو اور پوری ٹیم کو ایک خاص پلان کے تحت میدان میں اترنے کی ضرورت ہے اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے سابق کرکٹر راشد لطیف اور محمد یوسف نے کہا کہ پاکستانی ٹیم کو کامیابی حاصل کرنے کے لئے سخت محنت کی ضرورت ہے اور اس کیلئے پوری ٹیم کو یک جان ہوکر کھیلنا ہوگا بابر اعظم اور حارث سہیل سمیت ٹاپ آرڈر کے کسی بیٹسمین نے عمدہ کھیل پیش نہیں کیا جس کی وجہ سے پاکستان کی ٹیم ایک بڑا سکور کرنے میں ناکام رہی ہے ابھی بھی وقت ہے کہ پاکستان کی ٹیم محنت سے کم بیک کرے ورنہ نتیجہ پاکستان کے حق میں نہیں ہوگا۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی