اسلام آباد ہائی کورٹ: پاکستانی سفیر کو برطانوں جیل میں قید شہری طارق عزیز کے ہمراہ پیش ہونے کا حکم

اسلام آباد ہائی کورٹ: پاکستانی سفیر کو برطانوں جیل میں قید شہری طارق عزیز کے ...

  



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) اسلام آباد ہائیکورٹ نے برطانوی جیل میں قید پاکستانی شہری طارق عزیز کیس کی سماعت کے دوران حکم دیا ہے کہ سیکرٹری خارجہ، داخلہ اور پاکستانی سفیر اسے ساتھ لے کر عدالت میں پیش ہوں۔برطانوی جیل میں قید طارق عزیز کو پاکستان منتقل نہ کئے جانے کیخلاف کیس کی اسلام ہائیکورٹ میں سماعت ہوئی۔ جسٹس محسن اختر کیانی نے کہا کہ کام نہیں کرنا تو ہائی کمیشن کوبند کر دیں، پاکستانی سفیر کو بتا دیں طارق عزیز کوساتھ نہ لائے تو واپس نہیں جا سکیں گے۔ نواز شریف جانا چاہے تو دو دنوں میں چلا جاتا ہے، یہاں یہ طے کرنے میں چھ سال لگے گئے کہ برطانیہ سے پاکستانی شہری کو واپس کیسے لانا ہے۔ سماعت کے دوران جسٹس محسن اختر کیانی نے کہا کہ عدالتی حکم پر عمل نہ ہوا تو سیکرٹری خارجہ، داخلہ اور سفیر کو جیل بھیج دوں گا۔جسٹس محسن اختر کیانی نے وزارت خارجہ اور داخلہ کے نمائندوں سے کہا کہ اگر کسی ملک سے ایک کام بھی نہیں کرا سکتے تو سفارتخانے بند کر دیں۔ ایک وزارت دوسری کے ساتھ پنگ پانگ کھیل رہی ہے۔ کیا وزیراعظم کو کوئی امر مانع ہے کہ وہ کوئی آرڈر جاری کریں؟ وزیراعظم کے حکم کی ضرورت نہیں، صرف بتایا ہے کہ یہ آپ کے کرنے کا کام ہے۔ قوم کا کروڑوں اربوں روپے لگ رہے ہیں،ایمبیسی میں جائیں تو یہ فرعون بنے بیٹھے ہوتے ہیں۔

مزید : علاقائی