چوہنگ، دو بچے اغوا، ورثاء نے احتجاجا ملتان روڈ بلاک کردی

چوہنگ، دو بچے اغوا، ورثاء نے احتجاجا ملتان روڈ بلاک کردی

  



چوہنگ (نامہ نگار) چوہنگ کے علاقہ برکت کالونی سے مقامی کونسلر ملک ریاست کا بیٹا مدرسہ جاتے ہوئے اغوا ہوا جو رات کی تاریکی میں اغوا کاروں کے چُنگل سے بھاگ آیا اس کا مقدمہ درج ہوا اور بازیاب بچے کی نشاندہی کرنے کے باوجود بااثر افراد کے ڈیرے پر نا چھاپا مارا گیا اور نا کوئی گرفتاری عمل میں آئی،اس واقعہ کے دوسرے ہفتے عمر دلد اکرم ٖصبح سویرے مدرسے گیا مگر غائب ہوگیا، ورثاء نے کافی ڈھونڈا نا ملنے پر 15 پے کال کی مگر پولیس نا آئی اگلے دن تک پولیس نے کوئی کاروائی شروع ہی ناکی جس پر ورثاء خواتین اور اہل محلہ سمیت ملتان روڈ پر آگئے اور ٹریفک کو دونوں طرف سے بند کر دیا گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں۔ ورثا ء نے پولیس کے خلاف احتجاج کیا اور اس بچے کی بازیابی کے لیے اپنی آواز بلند کی۔میڈیاسے بات کرتے ہوئے گمشدہ محمد عمر ولد محمد اکرم نے کہا کہ پولیس ہمارے ساتھ تعاون نہیں کر رہی ایک ہی علاقہ سے دو بچے غائب ہوئے ہیں مگر پولیس خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے اس بچے کی عمر 11 سال ہے گھنٹوں ٹریفک بند رہی بعد میں پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے مقدمہ درج کرکے جلداز جلد بچے کو بازیاب کروانے کی یقین دہانی کروائی SHO تھانہ چوہنگ طاہرنے مظاہرین کو فوری انصاف کی یقین دہانی کروائی جس پر احتجاج ختم کر دیا گیا

مزید : علاقائی