ڈان سنڈروم سے متاثرہ بچوں کو توجہ کی ضرورت ہے، سید قاسم نوید قمر

  ڈان سنڈروم سے متاثرہ بچوں کو توجہ کی ضرورت ہے، سید قاسم نوید قمر

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر) وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد سید قاسم نوید قمر نے کہا ہے کہ ڈان سنڈروم میں مبتلا بچوں کو خصوصی نگہداشت، محبت اور توجہ کی ضرورت ہے اور وہ لوگ جو اس مقصد کے لئے کام کر رہے ہیں وہ بھی تعریف کے مستحق ہیں۔ یہ بات انہوں نے آج یہاں کراچی ڈان سنڈروم پروگرام کے دفتر کا دورہ کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر علی اللہ والا چیف ایگزیکٹو کراچی ڈان سنڈروم پروگرام ، ثمر نقوی سی ای او کے ڈی ایس پی اور ندیم بیگ ایڈمن کے ڈی ایس پی بھی موجود تھے۔ وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد سید قاسم نوید قمر نے کے ڈی ایس پی کے مختلف سیکشنوں کا بھی دورہ کیا اور ڈاون سنڈروم میں مبتلا بچوں کو فراہم کی جانے والی سہولیات اور علاج کی تعریف کی۔ انہوں نے ان خدمات کو بڑھانے میں حکومت سندھ کے تعاون کی یقین دہانی بھی کرائی۔ چیف ایگزیکٹو علی اللہ واللہ نے وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ کراچی ڈان سنڈروم پروگرام کے تحت ان بچوں کو علاج معالجے، مشاورت، مالی مدد اور بعض معاملات میں آمدورفت مہیا کررہی ہے۔ سید قاسم نوید قمر نے مزید کہا، ' محکمہ بحالی خصوصی افراد سندھ ڈاون سنڈروم میں مبتلا بچوں کو مشاورت، دیکھ بھال اور علاج بھی مہیا کررہا ہے اور مل کر ہم بہتر نتائج حاصل کرسکتے ہیں '۔ ان کا خیال تھا کہ ابتدائی مرحلے میں ایسے بچوں کی شناخت کے لئے والدین اور اساتذہ میں شعور بیدار کرنے کی ضرورت ہے تاکہ ان کا علاج بروقت کیا جاسکے۔ دریں اثنا وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد  سید قاسم نوید کی ہدایت پر، صوبہ بھر کے خصوصی تعلیم و بحالی مراکز میں یونیورسل چلڈرن ڈے منایا گیا۔ خصوصی بچوں نے  مزار قائد اعظم کراچی  کا دورہ کیا اور اس موقع پر  نیول گارڈز نے  انہیں گارڈ آف آنر دیا گیا۔ انہوں نے ڈریم ورلڈ ریسارٹس کا دورہ بھی کیا۔ جیکب آباد میں خصوصی بچوں میں تحائف بکس اور ریفریشمنٹ بکس بھی تقسیم کئے گئے۔ سکھر میں خصوصی افراد میں  پانچ وہیل چیئرز دی گئیں۔ اس موقع پر صوبہ بھر کے تمام خصوصی تعلیم و بحالی مراکز نے  یونیورسل چلڈرن ڈے منایا گیا۔   وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد سید قاسم نوید قمر نے اس موقع پر شاندار تقریبات منعقد کرنے  پر تمام افسران اور مراکز کے سربراہان کی تعریف کی ہے۔

کراچی (اسٹاف رپورٹر) وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد سید قاسم نوید قمر نے کہا ہے کہ ڈان سنڈروم میں مبتلا بچوں کو خصوصی نگہداشت، محبت اور توجہ کی ضرورت ہے اور وہ لوگ جو اس مقصد کے لئے کام کر رہے ہیں وہ بھی تعریف کے مستحق ہیں۔ یہ بات انہوں نے آج یہاں کراچی ڈان سنڈروم پروگرام کے دفتر کا دورہ کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر علی اللہ والا چیف ایگزیکٹو کراچی ڈان سنڈروم پروگرام ، ثمر نقوی سی ای او کے ڈی ایس پی اور ندیم بیگ ایڈمن کے ڈی ایس پی بھی موجود تھے۔ وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد سید قاسم نوید قمر نے کے ڈی ایس پی کے مختلف سیکشنوں کا بھی دورہ کیا اور ڈاون سنڈروم میں مبتلا بچوں کو فراہم کی جانے والی سہولیات اور علاج کی تعریف کی۔ انہوں نے ان خدمات کو بڑھانے میں حکومت سندھ کے تعاون کی یقین دہانی بھی کرائی۔ چیف ایگزیکٹو علی اللہ واللہ نے وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ کراچی ڈان سنڈروم پروگرام کے تحت ان بچوں کو علاج معالجے، مشاورت، مالی مدد اور بعض معاملات میں آمدورفت مہیا کررہی ہے۔ سید قاسم نوید قمر نے مزید کہا، ' محکمہ بحالی خصوصی افراد سندھ ڈاون سنڈروم میں مبتلا بچوں کو مشاورت، دیکھ بھال اور علاج بھی مہیا کررہا ہے اور مل کر ہم بہتر نتائج حاصل کرسکتے ہیں '۔ ان کا خیال تھا کہ ابتدائی مرحلے میں ایسے بچوں کی شناخت کے لئے والدین اور اساتذہ میں شعور بیدار کرنے کی ضرورت ہے تاکہ ان کا علاج بروقت کیا جاسکے۔ دریں اثنا وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد  سید قاسم نوید کی ہدایت پر، صوبہ بھر کے خصوصی تعلیم و بحالی مراکز میں یونیورسل چلڈرن ڈے منایا گیا۔ خصوصی بچوں نے  مزار قائد اعظم کراچی  کا دورہ کیا اور اس موقع پر  نیول گارڈز نے  انہیں گارڈ آف آنر دیا گیا۔ انہوں نے ڈریم ورلڈ ریسارٹس کا دورہ بھی کیا۔ جیکب آباد میں خصوصی بچوں میں تحائف بکس اور ریفریشمنٹ بکس بھی تقسیم کئے گئے۔ سکھر میں خصوصی افراد میں  پانچ وہیل چیئرز دی گئیں۔ اس موقع پر صوبہ بھر کے تمام خصوصی تعلیم و بحالی مراکز نے  یونیورسل چلڈرن ڈے منایا گیا۔   وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی برائے محکمہ بحالی خصوصی افراد سید قاسم نوید قمر نے اس موقع پر شاندار تقریبات منعقد کرنے  پر تمام افسران اور مراکز کے سربراہان کی تعریف کی ہے۔

مزید : صفحہ اول