اعلان جنگ کرچکے، میدان جنگ سے پیچھے ہٹنا گناہ کبیرہ ہے: مولانا فضل الرحمان

اعلان جنگ کرچکے، میدان جنگ سے پیچھے ہٹنا گناہ کبیرہ ہے: مولانا فضل الرحمان
اعلان جنگ کرچکے، میدان جنگ سے پیچھے ہٹنا گناہ کبیرہ ہے: مولانا فضل الرحمان
کیپشن:    سورس:   Twitter/@OfficialPDM

  

پشاور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ حکومت کے خلاف اعلان جنگ کیا جاچکا ہے اور میدان جنگ سے پیچھے ہٹنا گناہ کبیرہ ہے، اس سلیکٹڈ حکومت کو ذلت و رسوائی کے ساتھ نکالنا ہے۔

پی ڈی ایم کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ خیبر پختونخوا کے عوام نے ریفرنڈم کردیا اور سلیکٹڈ حکومت کو مسترد کردیا۔ دھاندلی ہوئی ہے، دھاندلی کرنے والا بھی معلوم ہے ، وہ کہتے ہیں کہ ہمارا نام نہ لو، آپ سیاست کریں اور ہم نام بھی نہ لیں۔ آپ دھاندلی کریں تو وہ جرم نہیں لیکن ہم دھاندلی کے خلاف احتجاج کریں تو آپ خفا ہوجاتے ہیں۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ سلیکٹڈ حکومت کے خلاف اعلان جنگ کیا جاچکا ہے اور میدان جنگ سے پیچھے ہٹنا گناہ کبیرہ ہے، آج تک اس کا کسی سے واسطہ نہیں پڑا تھا لیکن اب اسے پتہ چلے گا، اس سلیکٹڈ حکومت کو ذلت و رسوائی کے ساتھ نکالنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ آج ہم اس قابل نہیں کہ دنیا ہمارے ساتھ تعلقات قائم کرے، ناکام خارجہ پالیسی کی وجہ سے امریکہ ، چین، ایران اور سعودی عرب ہم پر اعتماد کرنے کو تیار نہیں ہے۔  امریکہ کی خوشنودی کیلئے چین کی 70 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کو تباہ کیا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ماضی میں بھارت کا وزیر اعظم پاکستان آیا اور پاکستان کو تسلیم کیا کیونکہ اس وقت پاکستان کی معیشت ترقی کر رہی تھی اور بھارت ہمارے ساتھ تجارت کرنا چاہتا تھا لیکن اب معیشت کو تباہ و برباد کردیا گیا ہے۔ جس ملک کی معیشت کمزور ہو وہ ریاست بھی تباہ و برباد ہوجاتی ہے۔

مزید :

قومی -