استنبول میں داعش کا ٹھکانہ پکڑا گیا، کیا کام کیا جا رہا تھا؟ تہلکہ خیز تفصیلات سامنے آ گئیں

استنبول میں داعش کا ٹھکانہ پکڑا گیا، کیا کام کیا جا رہا تھا؟ تہلکہ خیز ...
استنبول میں داعش کا ٹھکانہ پکڑا گیا، کیا کام کیا جا رہا تھا؟ تہلکہ خیز تفصیلات سامنے آ گئیں

  



انقرہ(مانیٹرنگ ڈیسک) شام میں برسرپیکار شدت پسند تنظیم داعش کے پھیلاﺅ کے متعلق لرزہ خیز انکشافات کا سلسلہ جاری ہے۔ گزشتہ روز ہم نے آپ کو خبر دی تھی کہ داعش برطانوی باشندوں کو بھی تربیت دے کر واپس برطانیہ بھیج چکی ہے تاکہ وہ وہاں کارروائیاں کر سکیں۔ آج ترکی کے شہر استنبول میں داعش کے تربیتی کیمپوں کا انکشاف ہوا ہے جس میں بچوں کو شدت پسندی کی تربیت دی جا رہی تھی۔ ڈیلی وطن کی رپورٹ کے مطابق ترک پولیس کے انسداد دہشت گردی یونٹ نے ان کیمپوں سے 50مشتبہ افراد کو گرفتار کیا ہے۔

وہ عرب ملک جہاں غیر ملکیوں کو ڈرائیونگ لائسنس نہیں ملا کرے گا

گرفتار ہونے والوں کے متعلق بتایا جا رہا ہے کہ وہ تاجک اور ازبک باشندے ہیں۔ گرفتار ہونے والوں میں 24بچے بھی شامل ہیں جنہیں ان کیمپوں میں تربیت دی جا رہی تھی۔ان مشتبہ افراد نے استنبول کے پیندک اور باساکسحیر اضلاع میں عمارتوں کے تہہ خانوں میں تربیتی کیمپ بنا رکھے تھے۔ان افراد کو کڑی نگرانی کے بعد مذکورہ اضلاع میں 18مختلف گھروں میں چھاپے مار کر گرفتار کیا گیا۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ یہ افراد بچوں کو داعش کے بنیادی مقاصد اور داعش کی ریاست میں رہنے کے طریقوں پر لیکچر دیتے تھے۔ازبک انٹیلی جنس ذرائع کا کہنا ہے کہ اس وقت 5ہزار سے زائد ازبک باشندے شام میں داعش کے ساتھ مل کر لڑ رہے ہیں اور داعش انہیں اس کے لیے تنخواہ دے رہی ہے۔واضح رہے کہ رواں سال اگست میں ازبکستان اسلامک موومنٹ نے، جو القاعدہ سے علیحدہ ہونے والا شدت پسند گروہ تھا، داعش سے اتحاد کا اعلان کیا تھا۔ مبینہ طور پر گرفتار شدگان کا تعلق اسی گروپ سے ہے۔

ایک انتہائی اعلیٰ تعلیم یافتہ عیسائی پروفیسر نے قرآن پاک میں سے غلطیاں نکالنے کا اعلان کیا۔۔۔نتیجہ جان کر آپ کا ایمان بھی مزید پختہ ہو جائے گا

مزید : بین الاقوامی