مشرق وسطی میں امریکی خلا نے روس کو موقع فراہم کیا، کسنجر

مشرق وسطی میں امریکی خلا نے روس کو موقع فراہم کیا، کسنجر

  



واشنگٹن(کے پی آئی)امریکا کے سابق وزیرخارجہ ہینری کسنجر نے اپنی حکومت کیمشرق وسطی اور عرب ممالک بارے پالیسیوں پر نکتہ چینی کرتے ہوئے خبردارکیا ہے کہ عرب خطے سے انخلا کے بعد روس امریکی خلا پر کرنا چاہتا ہے جس کے نتیجے میں امریکا کے عرب اتحادی نہ صرف شکست کا سامنا کررہے ہیں بلکہ امریکا کے ساتھ ان کے اتحاد کو بھی شک وشبے کی نگاہ سے دیکھا جانے لگا ہے۔

عرب ٹی وی کے مطابق اپنے ایک انٹرویو میں سابق امریکی وزیرخارجہ کا کہنا ہے کہ شام کے بحران اور عرب ممالک میں اٹھنے والی تبدیلی کی لہروں سے ایک نئی شکست ہماری منتظر ہے۔ خاص طور پر امریکا کے عرب خطے سے نکلنے کے بعد پیدا ہونے والے خلا کو روس نے پر کرنا شروع کردیا ہے۔ امریکی کردار کی کمزوری نے عرب اتحادیوں کو بھی مخمصوں کا شکار کیا ہے اور وہ امریکا کے ساتھ اپنے اتحاد اور دیرینہ تعلقات کو بھی شک و شبے کی بنیاد پر دیکھ رہے ہیں۔مشرق وسطی میں جیو پولیٹیکل زوال" کے عنوان سے ہنری کسنجر کا یہ انٹرویو امریکی اخبار "وال اسٹریٹ جرنل" میں شائع ہوا ہے جسے سعودی عرب "الوطن" نے بھی عربی میں شائع کیا۔ ہنری کسنجر کا کہنا ہے کہ شام میں روس کی فوجی مداخلت نے مشرق وسطی میں امریکی زوال اور کمزور پالیسیوں کی علامات واضح کردی ہیں۔ مشرق وسطی میں امریکا وہ کردار ادا نہیں کرسکا جو اسے ادا کرنا تھا مگر سنہ 1973 کی عرب اسرائیل جنگ کے بعد امریکا نے مشرق وسطی میں استحکام اور امن وامان کے صرف وعدے کیے۔ کوئی عملی قدم نہیں اٹھا سکا۔ روس نے امریکی کمزوری کو بھانپ لیا اور وہ آج امریکی خلا کو پر کررہا ہے۔

مزید : عالمی منظر


loading...