کشمیر یونیورسٹی کے طلباء کا زاہد رسول کے قتل کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ،کیمپس میں غائبانہ نماز جنازہ ادا کی

کشمیر یونیورسٹی کے طلباء کا زاہد رسول کے قتل کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ،کیمپس ...

  



سرینگر(اے پی پی) مقبوضہ کشمیرمیں کشمیری یونیورسٹی کے طالب علموں نے اودھمپور میں ایک حملے میں کشمیری ٹرک ڈرائیورزاہد رسول کے قتل کے خلاف سرینگر میں زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا اوریونیورسٹی کیمپس میں غائبانہ نماز جنازہ ادا کی۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق نو اکتوبر کو زاہد رسول بٹ سمیت تین کشمیری انتہا پسند ہندوؤں کے حملے میں شدید زخمی ہو گئے تھے جب وہ نئی دلی سے سرینگر واپس لوٹ رہے تھے ۔زاہد رسول اتوار کو نء دلی کے صفدرجنگ ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا تھا ۔یونیورسٹی کے سینکڑوں طالب علموں جنہوں نے ہاتھوں میں پلے کارڈ ز اٹھا رکھے تھے کیمپس میں جامع مسجد کے باہر جمع ہو گئے اور انہوں نے بھارت کے خلاف اور آزادی اور پاکستان کے حق میں نعرے بلند کئے ۔ بعدازاں انہوں نے شہید زاہد رسول کی غائبانہ نماز جنازہ ادا کی ۔طالبعلموں نے حملے میں ملوث عناصر کے خلاف سخت کارروائی کا بھی مطالبہ کیا۔

مزید : عالمی منظر


loading...