امریکی ڈرون طیاروں اوران کے مالکان بارے ڈیٹا بیس بنانے کا فیصلہ

امریکی ڈرون طیاروں اوران کے مالکان بارے ڈیٹا بیس بنانے کا فیصلہ

  



واشنگٹن (این این آئی)امریکہ ڈرون طیارے اور ان کے مالکان کے بارے میں معلومات پر مبنی قومی سطح پر رجسٹریشن ڈیٹا بیس بنانا چاہتا ہے۔امریکی وزیرٹرانسپورٹ اینتھنی فوکس کا کہنا ہے کہ ڈرون طیاروں اور ان کو استعمال کرنے والے افراد یا اداروں کا ریکارڈ تیار کرنے کے لیے ایک ٹاسک فورس تشکیل دے دی گئی ہے۔ان اقدامات کا فیصلہ آتش زدگی اور دیگر حادثات کی صورت میں ہنگامی امداد کے اداروں کی کارروائیوں کے دوران ڈرون طیاروں کی بے جا مداخلت کے واقعات کیا گیا ہے۔کرسمس کی آمد کے موقعے پر ڈرونز کی تعداد میں اضافے کے خدشے کے پیش نظر اس مسئلے کو خاصی اہمیت دی جا رہی ہے۔ٹاسک فورس نومبر کے آخر میں ڈیٹا بیس کے نافذالعمل ہونے کے بارے میں رپورٹ جاری کرے گی۔رپورٹ میں خاص طور پر اس بات کا جائزہ لیا جائے گا کہ کن اقسام کے ڈرونز کو ڈیٹا بیس میں رجسٹریشن سے استثنیٰ حاصل ہو گا، مثال کے طور پر کھلونوں کے طور پر خریدے جانے والے ڈرون طیارے۔کرسمس کی آمد کے موقعے پر ڈرونز کی تعداد میں اضافے کے خدشے کے پیش نظر اس مسئلے کو خاصی اہمیت دی جا رہی ہے۔فوکس کہتے ہیں کہ ہمیں محسوس ہوتا ہے کہ اس پر فوری طور پر کام کرنے کی ضرورت ہے، جتنا ممکن ہو، اتنا جلد۔ بغیر پائلٹ کے طیاروں کی رجسٹریشن سے احتساب اور ذمہ داری کی روایت پروان چڑھے گی۔ خاص طور پر ڈرون استعمال کرنے والے وہ افراد جنھیں امریکی ہوابازی کے نظام کے تحت کام کرنے کا کوئی تجربہ نہیں ہے۔ اس سے فضا اور زمین پر عوام کی حفاظت یقینی بنانے میں مدد ملے گی۔

اگرچہ نیشنل پریس فوٹوگرافرز ایسوسی ایشن (این پی پی اے) کی جانب سے ڈرونز کے بارے میں قوانین کے نفاذ کے خلاف مہم چلائی جاتی رہی ہے لیکن ڈیٹا بیس کی تیاری پر وہ بھی اصولی طور پر متفق نظر آتے ہیں۔

مزید : عالمی منظر


loading...