خیراتی تعلیمی اداروں کیلئے لیز کی نئی شرح مقرر کی جارہی ہے، رانا مشہود

خیراتی تعلیمی اداروں کیلئے لیز کی نئی شرح مقرر کی جارہی ہے، رانا مشہود

  



لاہور( خبرنگار) خیراتی تعلیمی اداروں کی سالانہ لیز کی شرح متعلقہ ادارے کی رینٹل مارکیٹ ویلیو کے ایک فیصدکے حساب سے وصول کی جائے جبکہ وصول ہونے والی شرح لیز میں سالانہ 5 فیصد اضافہ بھی شامل کیا جائے گا۔ان تجاویز کو صوبائی وزیر تعلیم رانا مشہود احمد کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں آج منظورکیا گیا۔ اجلاس میں سیکرٹری ہائر ایجوکیشن عرفان علی، ہائر ایجوکیشن پنجاب وچیئرمین ڈاکٹر نظام الدین اور دیگر افسران کے علاوہ خیراتی تعلیمی اداروں ایف سی کالج،کیتھیڈرل سکول ،کریسنٹ سکول اور دیگر سکولوں کے نمائندوں نے شرکت کی۔اجلاس میں طے کیا گیا کہ پنجاب ریونیو بورڈ کی خیراتی تعلیمی اداروں کی لیز کے متعلق کلاز نمبر10 میں ترمیم کی جائے گی۔ ترمیم کے مطابق وہ تمام خیراتی تعلیمی ادارے جو اپنی نوعیت کے لحاظ سے متعین تعریف پر پورا اترتے ہیں۔ان کے لئے لیز کی نئی شرح مقرر کی جارہی ہے۔صوبائی وزیر تعلیم نے کہا کہ نئی شرح مقرر کرنے کا مقصد مذکورہ تعلیمی اداروں کے لئے ہر گز مسائل پیداکر نانہیں بلکہ حکومت ان اداروں کی تعلیمی خدمات کو نہایت قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت تمام خیراتی تعلیمی اداروں کو یکساں مگر نہایت معمولی ریٹس پر لیز آؤٹ کرنے کے لئے متعلقہ قانون میں ترمیم کررہی ہے۔ان اداروں کی سالانہ لیز کی نئی شرح متعلقہ ادارے کی رینٹل مارکیٹ ویلیو کے صرف ایک فیصد سالانہ حصے پر مشتمل ہو گی۔ان تعلیمی اداروں کی مارکیٹ رینٹل ویلیو کا تعین ڈسٹرکٹ ریٹ اسسمنٹ کمیٹی کرے گی جبکہ وصول کی جانے والی اس ایک فیصد رقم پر ہر سال 5 فیصد کی شرح سے اضافہ ہو گا۔اجلاس میں شریک مختلف خیراتی تعلیمی اداروں مثلا ایف سی کالج،کیتھیڈرل سکول، کریسنٹ کالج اور دیگر کے نمائندوں نے لیز کی شرح کے تعین کے دیرینہ مسئلہ کے حل پر اپنے اطمینان کا اظہار کیا۔صوبائی وزیر تعلیم نے اجلاس کو بتایا کہ مذکورہ ترمیم وزیراعلی پنجاب محمد شہباز شریف کی منظوری کے بعد نافذالعمل ہو جائے گی۔صوبائی وزیر تعلیم رانا مشہود احمد خان کی زیر صدارت ایک اور اجلاس میں طلبا وطالبات میں 2015-16 کے دوران لیپ ٹاپس کی تقسیم کے حوالے سے مختلف امور پر غور کیا گیا۔ اس سال پنجاب میں طلبا میں ایک لاکھ لیپ ٹاپس تقسیم کئے جارہے ہیں۔

مزید : علاقائی


loading...