’’ بول‘‘ کے ملازمین کی تنخواہوں سے متعلق درخواست پر وکلاء بحث کیلئے طلب

’’ بول‘‘ کے ملازمین کی تنخواہوں سے متعلق درخواست پر وکلاء بحث کیلئے طلب

  



لاہور (نامہ نگار خصوصی ) لاہور ہائیکورٹ نے نجی چینل (بول) کے ملازمین کو تنخواہوں اور دیگر واجبات کی عدم ادائیگی کے خلاف دائر درخواست پر فریقین کے وکلاء کو اس کیس کے عدالتی اختیار سماعت سے متعلق مزید بحث کے لئے طلب کر لیا۔ جسٹس سید منصور علی شاہ نے کیس کی سماعت کی۔سرکاری وکیل نے ایف آئی اے کی جانب سے جواب داخل کراتے ہوئے کہا کہ چینل کے مرکزی ادارے ایگزیکٹ کے خلاف کراچی میں مقدمات درج ہیں لہذا عدالت عالیہ لاہور کو اس کیس کی سماعت کا اختیار حاصل نہیں ہے۔درخواست گزار ملازمین کے وکیل صفدر شاہین پیرزادہ نے عدالت کو بتایا کہ مالکان نے وعدے کے مطابق6 ماہ کی تنخواہیں اور واجبات ادا نہیں کئے۔ نجی چینل کا ہیڈ آفس اسلام آباد میں واقعہ ہے لہذا اس عدالت کو اس کیس کی سماعت کا مکمل اختیار حاصل ہے۔ایف آئی اے حکام اپنی نااہلی چھپانے کے لئے کیس کو مزید التوا میں ڈالنا چاہتے ہیں۔جس پر عدالت نے کیس کی مزید سماعت 29 اکتوبر تک ملتوی کرتے ہوئے فریقین کے وکلاء کو عدالتی اختیار سماعت سے متعلق مزید دلائل کے لئے طلب کر لیا۔

مزید : علاقائی


loading...