پنجاب پولیس کے رواں بجٹ کی شرح 5برسوں کی نچلی ترین سطح پر آگئی

پنجاب پولیس کے رواں بجٹ کی شرح 5برسوں کی نچلی ترین سطح پر آگئی

  



 لاہور(شہبا زاکمل جندران//انوسٹی گیشن سیل) ناقص کارکردگی یا انتظامیہ کی قائل کرنے کی صلاحیت میں کمی ۔رواں مالی سال کے دوران پنجاب پولیس کے بجٹ کی شرح پچھلے پانچ برسوں کی تاریخ میں نچلی ترین سطح پر آگئی۔مالی سال 2015-16کے دوران پنجاب پولیس کے لیے صوبے کے مجموعی بجٹ سے 5.99فیصد حصہ مختص کیا گیاہے۔معلوم ہواہے کہ رواں مالی سال کے دوران پنجاب کے مجموعی بجٹ 14کھرب 47ارب 24کروڑ روپے میں سے پنجا ب پولیس کے لیے 5.99کے تناسب سے 86ارب 69کروڑ روپے کی رقم مختص کی گئی ہے۔پنجاب پولیس کے گزشتہ پانچ برسوں کے سالانہ بجٹ پر نظر دوڑائیں تو مالی سال 2015-16کے بجٹ کی شرح سب سے کم ہے۔مالی سال 2011-12میں پنجاب پویس کا بجٹ صوبے کے مجموعی بجٹ کا 7.91 فیصد حصہ مختص کیا گیا۔مالی سال 2012-13کے لیے صوبے کے مجموعی بجٹ کا 8.26فیصد، مالی سال 2013--14کے دوران صوبے کے مجموعی بجٹ کا 7.71فیصد ،مالی سال 2014-15کے دوران صوبے کے مجموعی بجٹ کا 8.20فیصد جبکہ امسال یہ حصہ مجموعی بجٹ کا محض 5.99فیصد مختص کیا گیا ہے۔یہ پولیس کی ناقص کارکردگی ہے۔ جس کے باعث حکومت نے بجٹ سے پولیس کی پرسنٹیج کم کی ہے۔ یا پھر بجٹ پروپوزلز دینے والی انتظامیہ کی صلاحیتوں میں کمی تھی کہ وہ حکومت کو اپنی ڈیمانڈ سے مطمئن نہیں کرپائی۔حالیہ بجٹ میں پولیس کی تنخواہوں اور الاؤنسز کی مد میں پولیس کے مجموعی بجٹ سے 80.13فیصد کے تناسب سے 69ارب 47کروڑ روپے مختص کئے گئے ہیں۔ اسی طرح پولیس بجٹ میں 7.57فیصد کے تناسب سے پٹرول و ڈیزل جیسے اخراجات کے لیے 6ارب 56کروڑ روپے مختص کئے گئے ہیں۔پولیس کے تربیتی اداروں کے لیے مجموعی بجٹ سے 2.08فیصد کے تناسب سے ایک ارب 80کروڑ روپے کی رقم مختص کی گئی ہے جبکہ دیگر اخراجات کے لیے 10.22فیصد کے تناسب سے 8ارب 85کروڑ روپے کی رقم مختص کی گئی ہے۔

مزید : صفحہ اول


loading...