بورڈ کی تاریخ میں پہلی دفعہ نصابی کتب بروقت فراہم کی گئیں، خالد پرویز

بورڈ کی تاریخ میں پہلی دفعہ نصابی کتب بروقت فراہم کی گئیں، خالد پرویز

  



لاہور (کامرس رپورٹر)پنجاب کریکولم اینڈ ٹیکسٹ بک بورڈ نے آئندہ تعلیمی سال کے لیے سرکاری سکولوں میں مفت فراہم کی جانے والی نصابی کتب کی تیاری میں تقریباً ایک ارب روپے کی بچت کی ہے جبکہ نجی تعلیمی اداروں کے لیے تیار کی جانے والی نصابی کتب کی خرید کے ضمن میں والدین پر مالی بوجھ بھی 8 کروڑ روپے کم ہو گا۔ ان خیالات کا اظہار صدر آل پاکستان انجمن تاجران خالد پرویز نے گزشتہ روزذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کریکولم اینڈ ٹیکسٹ بک بورڈ نے سیکرٹری سکولز عبد الجبار شاہین اور مینجنگ ڈائریکٹر نوازش علی کی رہنمائی اور قیادت میں معیاری اور سستی نصابی کتب تیار کی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال کی نسبت آئندہ سال کے لیے نصابی کتب کی تیاری کے لیے ٹائیٹل کورز کے ٹینڈر کی مد میں بھی ایک کروڑ روپے کی بچت متوقع ہے۔انہوں نے کہا کہ بورڈ کی تیار کردہ تمام نصابی کتب جدید تقاضوں سے ہم آہنگ، اغلاط سے پاک اور طلبہ کی ذہنی استعداد کے مطابق ہیں۔ خالد پرویزنے مزید کہا کہ گزشتہ دو سالوں کے دوران بورڈ کی تاریخ میں پہلی دفعہ نصابی کتب بروقت فراہم کی گئی ہیں۔خالد پرویز نے کہا گزشتہ سال کے ریکارڈ کے مطابق بورڈ کے ماہرینِ مضامین نے نصابی کتب میں تقریباً چار ہزار اغلاط کو درست کیا۔ انہوں نے کہا کہ انجمن تاجرانِ پاکستان محکمہ تعلیم اور بورڈ کے سربراہان کو مندرجہ بالا کامیابیوں پر خراجِ تحسین پیش کرتی ہے۔

خالد پرویز

مزید : صفحہ آخر


loading...