جیلوں میں گنجائش سے زائد قیدی، جانوروں جیسا سلوک، نذرانے دینے والوں کی موجیں

جیلوں میں گنجائش سے زائد قیدی، جانوروں جیسا سلوک، نذرانے دینے والوں کی موجیں

  



لاہور(رپورٹ ۔چو ہد ری یو نس با ٹھ)پنجا ب بھر کی 32جیلو ں میں گنجا ئش سے کئی گنا ہ زیا د ہ قید یو ں اور حوا لا تیو ں کی مو جو دگی قید خا نو ں میں کر پشن کے فر وغ میں اہم کر دار ادا کر رہی ہیں ۔وارڈر (سپا ہی ) سے لیکر سپر نٹنڈ نٹ جیل تک کر پشن کے حما م میں سب ننگے ہیں اور جیلیں ایسا اونٹ بن چکی ہیں کہ جس کی کو ئی بھی کل سید ھی نہیں۔رش کے با عث قید ی حیوا نو ں سے بھی بد تر زند گی گزا رنے پر مجبور ہیں ۔جیلیں قبر سے بھی زیا د ہ خو فنا ک منظر پیش کر رہی ہیں ۔گنجا ئش سے دو گنا ہ زیا د ہ قید ی اور حوا لا تی بند ہو نے کی وجہ سے متعدد حوا لا تی لیٹر ینو ں پر کپڑے کی جھو لیا ں بنا کر سو نے پر مجبور ہیں ۔مین گیٹ سے لیکر تلا شی ،چکر بیر ک ، وارنٹی آفس سمیت تما م جگہو ں پر مبینہ طور پر رشوت وصو ل کی جا تی ہے ۔آئی جی آفس سے منسلک جیل بھی قید یو ں اور حوا لا تیو ں کے جا ئز حقو ق کی محا فظ بننے میں آخر نا کا م کیو ں ہے ۔؟ سپیشل ملا قا ت کیے لیے نذرا نو ں کا سلسلہ تا حا ل ختم نہیں ہو سکا ۔ملا زمین نے تنخوا ہیں ڈبل ہو نے کے با وجو د کر پشن نہیں چھو ڑی ۔سپر نٹنڈ نٹ جیل سے لیکر دیگر اربا ب اختیا ر نے جیلو ں میں دودھ دینے والے جا نو رو ں کے غیر قا نو نی ڈیر ی فا ر م بناکر انھیں آمد نی کا اڈہ بنا رکھا ہے ۔جہا ں قید ی ڈیو ٹی کے فرا ئض سر انجا م دے رہے ہیں جبکہ سپر نٹنڈ نٹ سمیت دیگر افسرا ن ریوا لو نگ چیر پر بیٹھے افسر شا ہی انجوا ئے کر رہے ہیں ۔جیلو ں میں 57ہزار2 سو 15قیدی و حوالاتی قید ہیں جبکہ سرکاری طور پر پنجاب کی تمام جیلوں میں 22ہزار 5سو 27 قیدیوں و حوالاتیوں کی گنجائش ہے ۔پنجاب بھر کی جیلوں میں53ہزار 2سو 20مرد ،670خواتین اور 695بچے جیلوں میں قید ہیں ۔ آئی جی جیل کے مطا بق جیلو ں کو کر پشن سے پا ک کر دیا گیا ہے شکا یت کی صور ت میں فو ر ی کا ررو ئی عمل میں لا ئی جا تی ہے اور اب تک متعدد ملا زمین کو سزا ئیں بھی دی گئی ہیں ۔ ایک رپو رٹ کے مطا بق کوٹ لکھپت جیل میں اس وقت3700کے قریب ملکی و غیر ملکی قیدی اور حوالاتی ہیں جن میں 2000ملکی قیدی‘970ملکی حوالاتی‘175غیر ملکی قیدی‘40غیر ملکی حوالاتی‘35ملکی خواتین قیدی‘80ملکی خواتین حوالاتی‘6غیر ملکی خواتین اور452سزائے موت کے قیدی ہیں۔ کوٹ لکھپت جیل میں سرکاری طور پر قیدیوں کی گنجائش 1053ہے. ،ڈسٹرکٹ جیل لاہور میں 4ہزار 3سو 88قیدی و حوالاتی ہیں ،سرکاری طور پراس جیل میں 1050قیدیوں کی گنجائش ہے، اس جیل میں4ہزار ایک سو71مرداور 65بچے قید ہیں ،سنٹرل جیل گوجرانوالہ میں 3ہزار6سو21قیدی قید ہیں جیل میں سرکاری طور پر 913قیدیوں کی گنجائش ہے سنٹرل جیل ساہیوال میں 4ہزار 7سو 90قیدی قید ہیں ، سرکاری طور پر جیل میں 1750قیدیوں کی گنجائش ہے ، اس جیل میں 4ہزار2سو 99مرد،40خواتین اور 51بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل قصور میں 1ہزار 9سو 90قیدی قید ہیں ، سرکاری طور پر 445قیدیوں کی گنجائش ہے ، اس جیل میں1ہزار ،7سو 44مرد،14خواتین اور 32بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل شیخوپورہ میں 2ہزار 4سو 48قیدی قید ہیں سرکاری طور پر اس جیل میں590قیدیوں کی گنجائش ہے ۔اس جیل میں2ہزار3سو 94مرد ،14خواتین اور 40بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل سیالکوٹ میں 2ہزار 4سو 70قیدی قید ہیں ،سرکاری طور پر اس جیل میں گنجائش 722ہ قیدیوں کی ہے ،اس جیل میں2ہزار 3سو67مرد ،57خواتین اور 46بچے قید ہیں ،راولپنڈی ریجن میں سنٹرل جیل راولپنڈی میں 4ہزار 6سو49قیدی قید ہیں ،سرکاری طور پراس جیل میں قیدیوں کی گنجائش 1ہزار9سو94ہے ، اس جیل میں4ہزار4سو 79مرد،126خواتین اور 44بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل اٹک میں 690قیدی قید ہیں جبکہ اس جیل میں سرکاری طور پر گنجائش 539ہے ، اس جیل میں6سو 81مرد،6خواتین اور 3بچے قید ہیں ، گجرات جیل میں 1ہزار 5سو 85قیدی قید ہیں ، اس جیل میں سرکاری طور پر گنجائش 3سو 85 قیدیوں کی ہے ، اس جیل میں1ہزار 5سو 54مرد،16خواتین اور 15بچے قید ہیں ،ڈسٹرک جیل جہلم میں 8سو 98قیدی قید ہیں جبکہ سرکاری طور پر اس جیل میں قیدیوں کی گنجائش 4سو 16ہے ، اس جیل میں8سو 75مرد،15خواتین اور 8بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل منڈی بہاوالدین میں 7سو 98قیدی قید ہیں جبکہ اس جیل میں سرکارطور پر گنجائش 2سو 79 قیدیوں کی ہے ،اس جیل میں7سو 88مرد اور 10بچے قید ہیں ،سب جیل چکوال میں 2سو 23قیدی قید ہیں سرکاری طور پر اس جیل میں گنجائش 1سو 42ہے ،جیل میں تمام مرد قیدی ہیں ، فیصل آباد ریجن میں سنٹرل جیل فیصل آباد میں 2ہزار6سو 56قیدی قید ہیں جبکہ سرکاری طور پر اس جیل میں 1ہزار 1سو 90 قیدیوں کی گنجائش ہے ،جیل میں تمام مرد قیدی ہیں سنٹرل جیل میانوالی میں 1ہزار 8سو 16قیدی قید ہیں جبکہ سرکاری طور پر اس جیل میں 1ہزار 50 قیدیوں کی گنجائش ہے ،اس جیل میں1ہزار7سو83مرد،12خواتین اور 21بچے قید ہیں ،بی آئی اینڈ جے جیل فیصل آباد میں 1سو 43قیدی قید ہیں سرکاری طور پراس جیل میں گنجائش 2سو 24 قیدیوں کی ہے۔اس جیل میں 3مرد اور 1سو 43بچے قید ہیں ,ڈسٹرکٹ جیل فیصل آباد میں 1ہزار9سو86قیدی قید ہیں سرکاری طور پر اس جیل میں گنجائش 8سو 53ہے ،1ہزار9سو 26مرداور60خواتین قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل جھنگ میں 1ہزار 8سو 95قیدی قید ہیں ،سرکاری طور پر اس جیل میں قیدیوں کی گنجائش 9سو 16ہے،1 اس جیل میں ہزار 7سو 56مرد،20خواتین اور19بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل سرگودھا میں 1ہزار 9سو45قیدی قید ہیں جبکہ اس جیل میں سرکاری طور پر گنجائش 5سو 63 قیدیوں کی ہے ،اس جیل میں1ہزار 9سو 15مرد،20خواتین اور 10بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل شاہ پور میں 9سو 10قیدی قید ہیں جبکہ اس جیل میں سرکار ی طور پر قیدیوں کی گنجائش 2سو 92 قیدیوں کی ہے ،اس جیل میں8سو 96مرد،7خواتین اور 8بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل ٹوبہ ٹیک سنگھ میں 9سو 76قیدی قید ہیں ۔اس جیل میں سرکاری طور پرقیدیوں کی گنجائش 5سو ہے اس جیل میں،9سو 62مرد،10خواتین اور 4بچے قیدہیں ،ملتان ریجن میں سنٹرل جیل ملتان میں 2ہزار 9سو 99قیدی قید ہیں جبکہ اس جیل میں سرکاری طور پر قیدیوں کی گنجائش 1ہزار 4سو 60ہے ،اس جیل میں2ہزار 9سو 87مرد اور15بچے قید ہیں ،بی آئی اینڈ جے جیل بہاولپور میں 948قیدی قید ہیں سرکاری طور پر اس جیل میں قیدیوں کی گنجائش 4سو 34ہے ،اس جیل میں25مرد اور 59بچے قید ہیں ،سنٹرل جیل بہاولپور میں 2ہزار 8سو 3قیدی قید ہیں جبکہ سرکاری طور پر اس جیل میں قیدیوں کی گنجائش 1ہزار3سو 34ہے ،اس جیل میں2ہزار 7سو 93مرداور 10خواتین قید ہیں ،سنٹرل جیل ڈیرہ غازی خان میں 1ہزار 9سو 66قیدی قید ہیں جبکہ سرکاری طور پراس جیل میں قیدیوں کی گنجائش 5سو 82ہے ، اس جیل میں1ہزار 9سو 41مرد،5خواتین اور 20بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل بہاولنگر میں 7سو 49قیدی قید ہیں ،سرکاری طور پر گنجائش 3سو 47ہے ،7سو 22مرد،5خواتین اور 22بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل ملتان میں 9سو 71قیدی قید ہیں سرکاری طور پر گنجائش 2سو 29ہے ،9سو 66مرد اور 5بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل مظفر گڑھ میں 9سو 72قیدی قید ہیں ،سرکاری طور پر گنجائش 1سو 80ہے ،9سو 60مرد اور 12بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل رحیم یار خان میں 1ہزار5سو 20قیدی قید ہیں سرکاری طو پر گنجائش 3سو 16ہے ،14سو 94مرد،12خواتین اور 14بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل راجن پور میں 2سو 95قیدی قید ہیں سرکاری طور پر گنجائش 1سو14ہے ،2سو32مرداور 11بچے قید ہیں ،ڈسٹرکٹ جیل وہاڑی میں9سو 99قیدی قید ہیں سرکاری طور پر گنجائش 5سو ہے ،8سو55مرد،25خواتین اور 30بچے قید ہیں ۔

مزید : صفحہ آخر