بھارت جمہوریت کے ماتھے کا کلنک بن گیا ہے، پیپلزپارٹی

بھارت جمہوریت کے ماتھے کا کلنک بن گیا ہے، پیپلزپارٹی

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)پاکستان پیپلز پارٹی کے اراکین قومی اسمبلی نواب علی وسان، میر شبیر علی بجارانی ،میر عامر علی خان مگسی اوراحسان الرحمان مزاری نے کہا ہے کہ بھارت میں ہندو انتہا پسند تنظیموں کی جانب سے پی سی بی کے چیئرمین شہریار خان کی بھارتی کرکٹ حکام سے ملاقات سے قبل جس غندہ گردی کا مظاہرہ کیاگیا اور پاکستانی امپائر علیم ڈار کی بھارت، افریقہ کے مابین میچز کی امپائرنگ سے علیحدہ ہونا پڑا دراصل ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت وہ سب کچھ کیا گیا۔پی پی پی میڈیا سیل سندھ سے جاری بیان میں انہوں نے کہا کہ شیوسینا نے ہریانہ میں نچلی ذات سے تعلق رکھنے والے ایک ہندو گھرانے کو آگ لگا دی جس میں دو کم سن بچے جل کر راکھ ہوگئے۔ اسی طرح سکھوں کی مقدس کتاب کی بے حرمتی کر کے سکھوں کو احتجاج پر مجبور کیا۔ انہوں نے کہا کہ دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کا لاگ الاپنے والا ملک بھارت خود جمہوریت کے ماتھے کا کلنک بن گیا ہے جہاں مذہبی اقلیتیں غیر محفوظ ہوگئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بھارت میں ہندو انتہا پسند تنظیمیں جو کچھ کررہی ہیں اس پر انہیں مودی سرکار کی مکمل آشیرباد حاصل ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ سارے واقعات دراصل ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت کروائے جارہے ہیں تاکہ عالمی برادری کی توجہ کسانوں کی احتجاجی تحریک سے توجہ ہٹائی جاسکے۔ انہوں نے بھارت کے جمہوریت پسند مصنفوں، سماجی تنظیموں اور جمہوریت پسند سول سوسائٹی کی جانب سے مودی سرکار کی پالیسیوں کی مذمت کو جمہوریت کے لئے خوش آئند قرار دیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...