غیر قانونی اثاثے بنانے کا الزام ،نیب کا سابق وفاقی وزیر ارباب عالمگیر اور ان کی اہلیہ کے خلاف تحقیقات کا فیصلہ

غیر قانونی اثاثے بنانے کا الزام ،نیب کا سابق وفاقی وزیر ارباب عالمگیر اور ان ...

  



اسلام آباد (آئی این پی)قومی احتساب بیورو(نیب) کے ایگزیکٹیو بورڈ نے سابق وفاقی وزیر ارباب عالمگیراورانکی اہلیہ سابق رکن قومی اسمبلی عاصمہ ارباب سمیت پیپلزپارٹی کے 3سابق وزراء سمیت کئی سابق عہدیداروں کیخلاف کرپشن ، غیر قانونی ذرائع سے اثاثے بنانے اور دیگر الزامات کے تحت تحقیقات کی منظوری دیدی ۔ بدھ کو یہ منظوری چیئرمین نیب قمرالزمان چوہدری کی زیر صدارت ہونے والے ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس میں دی گئی ۔نیب ذرائع کے مطابق سابق وفاقی وزیر ارباب عالمگیراورانکی اہلیہ سابق رکن قومی اسمبلی عاصمہ ارباب کے خلاف شکایات تھیں کہ دونوں میاں بیوی نے غیر قانونی ذرائع سے اثاثے بنائے ہیں جبکہ نیب چار مرحلوں میں سے پہلے مرحلے میں شکایات کی تصدیق پر کام کا آغاز ہو چکا ہے۔واضح رہے کہ ارباب عالمگیر پیپلز پارٹی کے دور حکومت میں وفاقی وزیر مواصلات کے عہدے پر فائزتھے جبکہ ان کی اہلیہ عاصمہ ارباب بھی پیپلز پارٹی کے ہی دور حکومت میں رکن قومی اسمبلی تھیں۔ ذرائع کے مطابق چیئرمین نیب کی سربراہی میں ہونیوالے نیب کے ایگزیکٹو بورڈ کے اجلا س میں بورڈ ممبران نے مجموعی طور پر پانچ انکوائریوں کاحکم دیا ۔ سابق صوبائی وزیر پیر مظہر الحق سے 13ہزار سے زائد اساتذہ کی غیرقانونی بھرتیوں،سابق ایم ڈی پیپکوبشارت چیمہ، سابق ایم ڈی گیپکوابراہیم ماجواور چیئرمین پی اے آر سی ڈاکٹر افتخار سے بھی غیرقانونی بھرتیوں ، سابق وزیر امین عمرانی سے غیرقانونی اثاثے بنانے ، سابق ڈی جی سول ایوی یشن ایئر کموڈور (ر)محمدجنید سے غیرقانونی خریداریوں اورکوئٹہ ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے چیئرمین اسماعیل گجر سے 25ملین روپے خورد بردکرنے کے الزام کی تحقیقات کی جائیں گی۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...