حسن ابدال،ساز ش یا اتفاق،ماں قتل،بیٹا ٹریفک حادثہ میں جاں بحق

حسن ابدال،ساز ش یا اتفاق،ماں قتل،بیٹا ٹریفک حادثہ میں جاں بحق

  



حسن ابدال(تحصیل رپورٹر)سازش یا اتفاق! سرے شام ماں کو گولیاں مار کر قتل کر دیا گیا جبکہ کچھ لمحہ بعد ہی بیٹا ایکسیڈنٹ میں ہلاک ہو گیا۔تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز شام ساڑھے چھ بجے کے قریب حسن ابدال کے معروف رہائشی علاقے ہاوسنگ کالونی میں نامعلوم شخص نے فائرنگ کر کے 35سالہ خاتون شازیہ بی بی زوجہ سہیل جو نواحی گاوں کوہلیہ کی رہائشی تھی اور ان دنوں ہاوسنگ کالونی میں رہائش پذیر تھی کو سر عام قتل کر دیا۔قاتل کی جانب سے 30بور پستول سے اندھا دھند فائرنگ کی گئی جس کی وجہ سے 5گولیاں مقتولہ کے سر میں لگیں اور وہ موقع پر ہی جانبحق ہو گئی۔قاتل اندھیرے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے موقع سے با آسانی فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا۔مقتولہ کا خاوند دبئی میں کام کے سلسلہ میں رہائش پذیر تھا۔قتل کی واردات سے کچھ لمحہ بعد ہی معروف ہزارہ روڈ پر فرینڈز سی این جی کے قریب موٹر سائیکل پر سوار کوہلیہ گاوں کے ہی رہائشی عامر علی اور 2 معصوم بچے چار سالہ احسن اور سات سالہ بچی میمونہ نامعلوم گاڑی کی زد میں آ کر شدید زخمی ہو گئے ۔چار سالہ بچہ احسن زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر ہی جانبحق ہو گیا جبکہ اس کی بہن میمونہ اور عامر علی شدید زخمی حالت میں ٹی ایچ کیو ہسپتال حسن ابدال لائے گئے۔بعدازاں انکشاف ہوا کہ قتل ہونے والی شازیہ بی بی حادثہ میں جانبحق ہونے والے معصوم بچے احسن کی والدہ تھی جبکہ اس کے ہمراہ زخمی میمونہ مقتولہ کی بیٹی اور عامر علی مقتولہ کا دیور تھا۔ پولیس نے تمام حالات کا جائزہ لیتے ہوئے تفتیش شروع کر دی ہے۔ زرائع دونوں واقعا ت کو سوچی سمجھی سازش قرار دے رہے ہیں جس میں قاتل کی جانب سے ان تمام خاندان کے افراد کو قتل کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...