عدالتیں اپنی ذمہ داریاں پوری کرتیں تو لاگ قانون ہاتھ میں نہ لیتے ،پروفیسر ابراہیم

عدالتیں اپنی ذمہ داریاں پوری کرتیں تو لاگ قانون ہاتھ میں نہ لیتے ،پروفیسر ...

  



لکی مروت(نمائندہ پاکستان)امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا پروفیسر محمد ابراہیم خان نے کہاہے کہ اگر عدالتیں اپنی ذمہ داریاں پوری کرتیں تو لوگ قانون ہاتھ میں لینے پر مجبور نہ ہوتے قانون کی حکمرانی نہ ہونے سے پورا معاشرہ افراتفری کا شکار ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے لکی مروت کے ایک روزہ دورے کے موقع پر تجوڑی اور تتر خیل میں الگ الگ شمولیتی اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے کیادیگر مقررین میں ضلعی امیر مفتی عرفان اللہ اور سیکرٹری جنرل سبز علی خان شامل تھے اس موقع پر نائب امیر ملک میر شاہ، ضلعی کونسلرز حنیف اللہ ، عرفان اللہ، طارق جان خان بیگو خیل اور حافظ محمد جمشید ایڈووکیٹ بھی موجود تھے تجوڑی میں ویلج ناظم تری خیل شریف اللہ، ویلج ناظم آدم زئی محمد امین سمیت کونسلرز صفی اللہ ، حمید اللہ ، محمد رحمان ، توفیق خان ، خیر محمد ،سابق ہیڈ ماسٹر سیف الرحمن، محمد آیاز اور قاری خان جبکہ تتر خیل میں ویلج نائب ناظم عمر نیاز،کونسلرز انعام اللہ، الیاس خان، میر عالم خان، ہاتھی خان، اشفاق خان ،ملک سیف اللہ خان، حاجی سلمان خیل ، کرامت اللہ، میر احمد جان اورٹرانسپورٹر حضرت میر نے ساتھیوں اور خاندان سمیت جماعت اسلامی میں شمولیت کا اعلان کیا پروفیسر ابراہیم نے کہا کہ قانون کی مسلسل خاموشی پرممتاز قادری نے خود اقدام کیاعدالتوں کو اس کیس کا فیصلہ حالات و واقعات دیکھ کر کرنا چاہئے تھاانہوں نے کہا کہ پاکستان اسلام کے نام پر وجود میں آیا تھا لیکن قیام پاکستان سے لے کر اب تک یہ ملک اسلامی نظام کو ترس رہا ہے زندگی کے تمام شعبے لادین فلسفے کی یلغار میں ہیں حکمران عوام کی بجائے غیر ممالک کی خدمت میں لگے ہوئے ہیں انہوں نے کہا کہ پاکستان وسائل سے مالا مال ملک ہے اس کے عوام محنتی اور جفا کش ہیں لیکن صحیح اور ایماندار قیادت کے نہ ہونے سے ملک کا بچہ بچہ مقروض ہے انہوں نے کہا کہ حضرت امام حسین ؑ نے اپنے خاندان اور ساتھیوں سمیت عظیم قربانی نظام حکومت کو درست راستے پر ڈالنے کے لئے دی انہوں نے مسلمانوں کو ظالم حکمرانوں کے سامنے کلمہ حق بلند کرنے کا درس دیا انہوں نے کہا کہ پاکستان میں جتنی بھی سیاسی جماعتیں ہیں سب موروثیت کی بنا پر خاندان کے افراد کو منتقل ہورہی ہیں ملک کی کسی بھی سیاسی پارٹی میں جمہوریت نہیں جماعت اسلامی پر کسی خاندان یا فرد کا قبضہ نہیں یہ ملک کی واحد جماعت ہے جہاں جمہوریت ہے اور قابلیت کی بنیاد پر عہدیداروں کاانتخاب ہوتا ہے انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی کے پاس ملک کے تمام مسائل کا حل موجود ہے

مزید : پشاورصفحہ اول


loading...