کراچی آپریشن پر وفاقی حکومت کی کمیٹی کو مسترد کرتے ہیں ،علی زیدی

کراچی آپریشن پر وفاقی حکومت کی کمیٹی کو مسترد کرتے ہیں ،علی زیدی

  



 کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان تحریک انصاف نے کراچی آپر یشن پر وفاقی حکومت کی جانب سے قائم کردہ ’’ریویو کمیٹی‘‘ کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اگر یہ اتنی ہی ناگزیر ہے تو لاہور کے لیے بھی ایسی ہی کمیٹی بنائی جائے کیونکہ اگر آپریشن پر کراچی میں تحفظات ہیں تو لاہور میں بھی ہونگے۔ انصاف ہاؤس میں ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کراچی کے چیف آرگنائزر علی زیدی نے کہا کہ مذکورہ کمیٹی میں سینیٹر بیرسٹر فروغ نسیم کے ذریعے ایسی جماعت کو نمائندگئی ہے جس سے لوگوں کو زیادہ شکایات ہیں۔ فروغ نسیم کی شمولیت نے اس کمیٹی کو جانبدار بنا دیا ہے۔اگر ایک جماعت کو نمائندگی دی گئی ہے تو دیگر جماعتوں اور ان کے کارکنوں کے تحفظات کون سنے گا لہٰذا اس کمیٹی کو غیر جانبدار بنانے کے لیے جماعت اسلامی، پیپلز پارٹی، تحریک انصاف سمیت تمام جماعتوں کو نمائندگی دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ کمیٹی کے قیام کا نوٹیفکیشن بذات خود اُسے متنازعہ بناتا ہے کہ حکومت کمیٹی تو بنا رہی ہے مگر اس کے کام کرنے کے طریقہ کار کو وضع نہ کرسکی۔ انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ کی منظوری سے ہونے والے اس آپریشن کے حوالے سے کسی بھی اقدام سے قبل اسے پارلیمنٹ میں زیر بحث لانا چاہئے تھامگر حکمرانوں نے اپنی حکومت بچانے کے لیے اس جماعت کے سامنے گھٹنے ٹیک دیئے ہیں حالیہ آپریشن میں جس جماعت کے سب سے زیادہ ٹارگٹ کلرز اور بھتہ خور گرفتار ہوئے جس کی بناء پر کراچی میں امن ممکن ہو سکا۔ اس موقع پر پی ٹی آئی کے مرکزی رہنما عمران اسماعیل، فردوس شمیم نقوی، عزیز خان آفریدی، ایم پی اے خرم شیر زمان اور سیکریٹری اطلاعات کراچی دوا خان صابر بھی موجود تھے۔اس موقع پر پارٹی کے سینئر رہنما عمران اسماعیل نے کہا کہ ایک طرف تو حکومت ایم کیو ایم کے ناجائز مطالبات تسلیم کر رہی ہے تو دوسری جانب ایم کیو ایم رہنما بیرون ملک حکومت اور فوج کے خلاف زہر اگل رہے ہیں۔ انہوں نے فاروق ستار کے اس بیان کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جس میں انہوں نے نواز شریف کے دورہ امریکہ کے موقع پر امریکی حکومت سے اپیل کی تھی کہ حکومت اور فوج کو مجبور کریں کہ وہ آپریشن کی میں ایم کیو ایم کو نشانہ بنائیں۔ پی ٹی آئی رہنما فردوس شمیم نقوی کا کہنا تھا کہ حکومت نے ایم کیو ایم کے استعفے واپس دلا کر کراچی کا امن ایک بار پھر داؤ پر لگا دیا ہے۔ حکومت خوفزدہ تھی کہ ایم کیو ایم استعفوں پر عدالت کا فیصلہ نہ آجائے جس سے نواز حکومت گر سکتی تھی۔ تحریک انصاف رہنماؤں نے بیرون ملک موجود اپنے رہنما فیصل واڈا کے اس بیان سے لا تعلقی کا اظہار کیا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ تحریک انصاف کی مقتدر حلقوں سے بات ہوچکی ہے اور دسمبر میں کراچی تحریک انصاف کو مل جائے گا۔ فردوس شمیم نقوی نے کہاکہ تحریک انصاف غیر جمہوری یا چور دروازے سے نہیں بلکہ کراچی کی عوام کی حمایت سے بلدیاتی الیکشن میں کامیابی حاصل کریں گے۔ اس موقعے پر عمران اسماعیل نے بتایا کہ انہوں نے دھمکی آمیز بیانات پرکراچی کے ایک پولیس اسٹیشن میں مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی دانیال عزیز کے خلاف مقدمے کی درخواست دی تھی جو کہ مسترد کردی گئی اب جمعرات کو وہ دانیال عزیز کے خلاف سٹی کورٹ ساؤتھ میںFIRکے لئے درخواست دائرکریں گے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...