حکومت سندھ 3 سال سے محروم استاتذہ کا مسئلہ فوری حل کرے حافظ نعیم الرحمٰن

حکومت سندھ 3 سال سے محروم استاتذہ کا مسئلہ فوری حل کرے حافظ نعیم الرحمٰن

  



 کراچی (اسٹاف رپورٹر) امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ 3سال سے تنخواہوں سے محروم اساتذہ کی جدو جہد میں ان کے ساتھ ہیں ۔ان کی تنخواہیں اور روز گار ان کا حق ہے ۔وزیر اعلیٰ سندھ اور وزیر تعلیم ان اساتذہ اور ان کے خاندانوں کا مسئلہ فوری طور پر حل کریں ۔ضرورت پڑی تو جماعت اسلامی اساتذہ کے ساتھ وزیر اعلیٰ ہاؤس پر بھی احتجاج کرے گی ۔تنخواہوں سے محروم اساتذہ کا حق ہے کہ عدالت کی جانب سے بھی انہیں فوری انصاف فراہم کیا جا ئے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روز ادارہ نور حق میں جمع ہو نے والے مرد و خواتین اساتذہ سے خطاب کر تے ہوئے کیا ۔اس مو قع پراساتذہ کی اسکروٹنی کمیٹی کے ممبرحکیم تونیو،ٹیچرز ایسوسی ایشن کراچی کے جنرل سیکریٹری آصف ضیاء نے بھی خطاب کیا ۔اس مو قع پر جماعت اسلامی کراچی کے سیکریٹری عبد الوہاب ،سیکریٹری اطلاعات زاہد عسکری ،ٹیچرز ایسوسی ایشن کراچی کے چیئرمین آفتاب میمن ،سینئر وائس چیئر مین ظہیر احمد بلوچ ،جوائنٹ سیکریٹری شاہ نواز مگسی اور دیگر بھی مو جود تھے ۔حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ سندھ حکومت نے اپنے ہی بھرتی کیے گئے ان اساتذہ کے ساتھ بڑا ظلم کیا ہے اور ان کے خاندانوں پر جبر کیا ہے ۔سندھ حکومت میں بد عنوانی اور بدانتظامی بہت ہوئی ہے ۔ان اساتذہ کو جب قانون کے مطابق اور قوائد و ضوابط کے تحت تمام مراحل طے کر نے کے بعداپائنمنٹ لیٹر جاری کیے تھے اور ان کی باقاعدہ حاضری کا نظام بھی شروع ہو گیا تھا ۔تو پھر کیا جواز ہے کہ 3 سال سے ان کوتنخواہوں سے محروم رکھا گیا ہے ۔جماعت اسلامی ان کے حق کے حصول کی جدو جہد میں ان کے ساتھ ہے اور اس کے لیے جو بھی ضروری اور قانونی راستہ اخیتار کر نے کی ضرورت پڑی ہم کریں گے اور ان اساتذہ کو ہر گر تنہا نہیں چھوڑیں گے ۔وزیر اعلیٰ سندھ اور وزیر تعلیم اپنی حکومت اور پارٹی کی ساکھ بحال کر نے اور لاج رکھنے کے لیے ان اساتذہ کا مسئلہ حل کردیں۔انہوں نے کہا کہ ہم اس سلسلے میں حکومت اور انتظامیہ سے بھی رابطہ کریں گے اور اس مسئلے کے حل کے لیے ہر ممکن کوشش کریں گے ۔حکیم تونیو نے ان اساتذہ کی بھرتی اور تقرری کے بارے میں تفصیلات سے آگاہ کیا اور بتایا کہ 2012میں تمام قانونی قواعد و ضوابط کو پورا کرتے ہوئے خود سندھ حکومت نے ان کو بھرتی کیا تھا اور بعد میں ایک کمیٹی بنا کر ان کی اسکروٹنی بھی کی گئی لیکن یہ مظلوم اساتذہ تاحا ل اپنے حق سے محروم ہیں ۔صوبائی حکومت اور محکمہ تعلیم کی بدعنوانی اور بدانتظامی کی سزا ہزاروں اساتذہ اور ان کے خاندانوں کو دی جارہی ہے ۔آصف ضیاء نے کہا کہ ہم 3سال سے اپنے حق کی جدو جہد کر رہے ہیں اور اب ہمیں امید ہے کہ ہمارا مقصد ضرور پورا ہو گا کیونکہ اب حافظ نعیم الرحمن نے ہمارا ساتھ دینے کا اعلان کیا ہے ۔ہم اس سے پہلے بھی ان کے پاس آچکے ہیں اور انہوں نے ہمارے ساتھ تعاون کیا تھا اب ہماری جدو جہد میں یہ ہمارے شانہ بشانہ ہوں گے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر