شہباز شریف کی صدارت میں اجلاس، پنجاب میں نویں، دسویں محرم کو ڈبل سواری پر پابندی، یوم ععاشور پر موبائل فون سروس بند رہیگی

شہباز شریف کی صدارت میں اجلاس، پنجاب میں نویں، دسویں محرم کو ڈبل سواری پر ...

  



لاہور)جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کے زیرصدارت اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا جس میں محرم الحرام خصوصاً یوم عاشور صوبہ بھر میں امن عامہ کی فضا برقرار رکھنے کیلئے سکیورٹی انتظامات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اور فول پروف سکیورٹی یقینی بنانے کیلئے اہم فیصلے کئے گئے۔اجلاس میں نویں اور دسویں محرم کوصوبہ بھر میں ڈبل سواری پر پابندی کا فیصلہ کیا گیا جبکہ دسویں ویں محرم کو صوبہ بھر میں صبح 8 بجے سے رات 8 بجے تک موبائل فون سروس بند رکھنے کا فیصلہ بھی کیا گیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عوام کے جان ومال کا تحفظ سرفہرست ترجیح ہے، اس ضمن میں کسی قسم کی غفلت یا کوتاہی کی کوئی گنجائش نہیں۔ پنجاب حکومت نے صوبے میں امن عامہ کی فضا کو مزید بہتر بنانے کیلئے تمام ضروری اقدامات کئے ہیں اوراسلحہ کی نمائش کرنیوالوں کیخلاف بلاامتیاز کارروائی عمل میں لا ئی جا رہی ہے۔ مذہبی منافرت پر مبنی لٹریچر کی اشاعت و تقسیم کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی اوراس ضمن میں خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف قانون کے تحت کارروائی جا ری ہے۔نیشنل ایکشن پلان کے تحت صوبہ بھر میں کئے جانیوالے اقدامات کے حوصلہ افزا نتائج سامنے آئے ہیں۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ملک کو نازک صورتحال کا سامنا ہے، دشمن کے ناپاک عزائم ناکام بنانے کیلئے قانون نافذ کرنیوالے ادارے کمربستہ ہو جائیں اور صوبہ بھر میں یوم عاشور کے موقع پر وضع کردہ فول پروف سکیورٹی پلان پر من و عن عملدرآمد یقینی بنایا جائے اورشر پسندوں پر کڑی نظر رکھی جائے۔ 9ویں اور 10ویں محرم کو ڈبل سواری پر پابندی کے فیصلے پر سوفیصد عملدرآمد ہونا چاہیئے۔ امام بارگاہوں، مساجد، عبادت گاہوں اور مزارات کی سکیورٹی پر خصوصی توجہ دی جائے اور انٹیلی جنس کی بنیاد پر سرچ آپریشن تسلسل کے ساتھ جاری رکھے جائیں۔ قانون نافذ کرنے والے ادارے باہمی رابطے اور معلومات کی فراہمی کیلئے کمونیکیشن کے موثر متبادل انتظامات یقینی بنائیں۔ جلوسوں اور مجالس کی حفاظت کیلئے چار درجاتی حصار قائم کرنے کے فیصلے پر پوری طرح عملدرآمد کرایا جائے۔ رات کے وقت عزاداری کے جلوسوں اور مجالس کیلئے روشنی کے متبادل انتظامات کے طو رپر جنریٹرز کا بندوبست ہونا چاہیئے۔ضابطہ اخلاق پر ہر صورت عملدرآمد کرایا جائے۔ اشتعال انگیز وال چاکنگ اور متنازعہ لٹریچر کی اشاعت و تقسیم پر پابندی کے قانون اور ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنیوالوں کیخلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے۔معاشرے میں بھائی چارے، تحمل، رواداری اور برداشت کے جذبات کو فروغ دیا جائے۔ تمام جلوس مقرر کئے گئے روٹس اور اوقات کے مطابق اختتام پذیر ہونے چاہئیں۔ ٹریفک کے متبادل انتظامات کرکے عوام کی سہولت کیلئے ان کی موثر انداز میں تشہیر کی جائے۔ نواز شریف نے کہا کہ صوبائی کابینہ کمیٹی برائے امن و امان امن عامہ کی صورتحال یقینی بنانے کیلئے کئے جانیوالے اقدامات کا باقاعدگی سے جائزہ لے۔ منتخب نمائندے بھی پولیس اور انتظامیہ کے ساتھ مل کر سکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیں۔ انہو ں نے تاکید کی کہ جلوسوں اور مجالس کی حفاظت پر مامور سکیورٹی اہلکاروں کو کھانے پینے کے اشیاء کی بروقت فراہمی کے انتظامات بھی کئے جائیں۔کمشنر ز اورآر پی او زاپنے اپنے متعلقہ اضلاع میں سکیورٹی کے انتظامات کا موقع پر جاکر خود جائزہ لیں اوراس ضمن میں رپورٹ پیش کی جائے۔ سیکرٹری داخلہ نے صوبے میں سکیورٹی انتظامات کے حوالے سے کیے جانیوالے اقدامات پر بریفنگ دی جبکہ انسپکٹر جنرل پولیس نے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف قانونی کاروائی کے حوالے سے اجلاس کو آگاہ کیا۔صوبائی وزراء رانا ثناء اللہ، راجہ اشفاق سرور، معاون خصوصی رانا مقبول احمد، اراکین قومی و صوبائی اسمبلی پرویز ملک، میاں مرغوب احمد، میاں نصیر احمد، رمضان صدیق بھٹی، ماجد ظہور، باؤ اختر علی، انسپکٹر جنرل پولیس، سیکرٹری داخلہ، کمشنر لاہور ڈویژن، سیکرٹری اطلاعات اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اعلیٰ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔ صوبے کے تمام ڈویژنل کمشنرز، آر پی اوز اور منتخب نمائندے ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے جبکہ چیف سیکرٹری پنجاب خضر حیات گوندل راولپنڈی سے ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے۔

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ جمہوریت کے فروغ اورجمہوری اداروں کے استحکام کیلئے میڈیا نے مثبت کردارادا کیا ہے ۔ موجودہ حالات میں میڈیا کا کرداراورزیادہ اہمیت اختیار کرگیا ہے ۔میڈیانے پہلے بھی قومی یکجہتی ،اتحاد ،یگانگت اور اتحاد بین المسلمین کیلئے اہم کردارادا کیا ہے اورامید ہے کہ آئندہ بھی اسی طرح کا کردار اداکرے گا۔حضرت امام حسین ؑ اور ان کے جانثاروں نے ایک عظیم مقصد کیلئے قربانی دی۔محرم الحرام کااحترام اور تقدس ہم سب پر لازم ہے ۔پنجاب حکومت نے محرم الحرام کے دوران صوبے میں امن عامہ کی فضا ء برقرار رکھنے کیلئے تمام ضروری اقدامات کیے ہیں تاہم معاشرے میں تحمل،برداشت ،بھائی چارے اوررواداری کے جذبات کو فروغ دینے کیلئے میڈیا کا کرداربھی نہایت اہمیت کاحامل ہے ۔وزیراعظم محمد نوازشریف کی قیادت میں پاکستان نے ترقی اورخوشحالی کی جانب قدم بڑھایا ہے،قومی معیشت بہتر ہورہی ہے ،زرمبادلہ کے ذخائر 21ارب ڈالر کے قریب پہنچ چکے ہیں اورپاکستان کی کریڈٹ ریٹنگ میں بھی اضافہ ہوا ہے ۔سینئر میڈیا پرسنز سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ میڈیا نے اپنی جدوجہد ،قربانیوں اورکاوشوں سے آزادی حاصل کی ہے ۔ حکومتوں کے احتساب اوررہنمائی کیلئے ذمہ دار اور آزاد میڈیا انتہائی ضروری ہے ۔میں ہمیشہ پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا سے رہنمائی لیتا ہوں ۔انہوں نے کہا کہ میڈیانے ہر موقع پر جاندار کردارادا کیا ہے جسے ہم تحسین کی نگاہ سے دیکھتے ہیں ۔وقت گزرنے کیساتھ میڈیا کے کردارمیں مزید نکھار آئے گا۔وزیراعلیٰ نے پاکستان کو درپیش مسائل کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ ملک کو دہشت گردی اورتوانائی بحران کے بڑے چیلنجز کا سامنا ہے۔دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سیاسی و عسکری قیادت اور پوری قوم ایک صفحہ پر ہے۔پاک افواج نے دہشت گردی کیخلاف جنگ میں نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہیں ۔انہوں نے کہاکہ ہم سب نے مل کر پاکستان کی بقاء کی جنگ جیتنا ہے اوروطن عزیز کو امن و سلامتی کا گہوارہ بناناہے۔انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کیخلاف جنگ جیتنے کیلئے بندوق کی گولی کیساتھ سماجی ،معاشی اور معاشرتی انصاف کی گولیاں بھی ضروری ہیں اورانتہاء پسندی کے رجحانات کے خاتمے کیلئے غربت،بے روزگاری اورکرپشن کے مسائل پر بھی قابو پانا ہوگا۔پنجاب میں نیشنل ایکشن پلان کے تحت انتہائی موثر اقدامات کئے گئے ہیں اورپنجاب پہلا صوبہ ہے جس نے انسداددہشت گردی فورس تشکیل دی ہے ۔انسداددہشت گردی فورس کی تربیت انتہائی پیشہ ورانہ انداز میں کی گئی ہے اوریہ فورس دہشت گردی کے ناسور کے خاتمے کیلئے اہم کردارادا کررہی ہے۔انہوں نے کہا کہ وفاقی و صوبائی حکومتیں نیشنل ایکشن ایکشن پلان کے تحت دہشت گردی کے خاتمے کیلئے اقدامات کررہی ہیں۔پنجاب میں نیشنل ایکشن پلان کے تحت انسداد دہشت گردی کیلئے قوانین میں ضروری ردوبدل کر کے سزاؤں کو سخت کیا گیا ہے ۔تعلیمی نصاب میں رواداری ،تحمل اور برداشت کے رویوں کو فروغ دینے کیلئے خصوصی باب شامل کیے گئے ہیں۔صوبے میں لاؤڈ سپیکر کے غلط استعمال،مذہبی منافرت پر مبنی لٹریچر کی تقسیم واشاعت اوروال چاکنگ کو بھی سختی سے روکا گیا ہے اور حکومت پنجاب کے ان اقدامات کے مثبت نتائج سامنے آئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کئی دہائیوں سے مذہبی منافرت اورفرقہ بندی نے معاشرے میں جو زہر گھولا ہے اس کو زائل کرنے کیلئے بھی موثر حکمت عملی اپنائی گئی ہے ۔دہشت گردی کے خلاف جنگ اجتماعی کاوشوں اور قوم کی طاقت سے جیتیں گے۔انہوں نے کہاکہ چین کی جانب سے اربوں ڈالر کا اقتصادی پیکیج پاکستان کیلئے عظیم تحفہ ہے ۔چائنہ پاکستان اکنامک کوریڈور سے نہ صرف پاکستان بلکہ پورے خطے کو فائدہ پہنچے گا۔سی پیک کا تحفظ ہر قیمت پرکیا جائے گا۔پاک فوج،عدلیہ،حکومت اورپوری قوم سی پیک کے تحفظ کیلئے یکسو ہے۔وزیراعلیٰ نے توانائی بحران کے خاتمے کیلئے کی جانے والی کاشوں کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نوازشریف کی قیادت میں توانائی کی کمی کے مسئلے پر قابو پانے اورلوڈ شیڈنگ کے اندھیروں کودور کرنے کیلئے دن رات کاوشیں کی جاری ہیں۔پنجاب میں گیس کی بنیاد پر 3600میگاواٹ بجلی پیدا کرنے کے منصوبوں پر کام شروع ہوچکا ہے جبکہ ساہیوال میں 1320میگاواٹ کے کول پاور پلانٹ پر تیزی سے کام جاری ہے ۔پنجاب حکومت نے قائد اعظم سولر پارک بہاولپور میں 100میگاواٹ کا سولر پاور پلانٹ کا منصوبہ بھی ریکارڈ مدت میں مکمل کیا ہے ۔صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ ،ترجمان پنجاب حکومت زعیم حسین قادری،آئی جی پولیس پنجاب ،سیکرٹری داخلہ،پریس سیکرٹری وزیراعلیٰ پنجاب،سیکرٹر ی اطلاعات ،سیکرٹری وزیراعلیٰ پنجاب اورڈی جی پی آر بھی اس موقع پر موجود تھے۔

مزید : ملتان صفحہ اول


loading...