تحریک طالبان نے افغان طالبان کیساتھ اتحاد، آئندہ مشترکہ کارروائیاں کرنے کااعلان کردیا

تحریک طالبان نے افغان طالبان کیساتھ اتحاد، آئندہ مشترکہ کارروائیاں کرنے ...
تحریک طالبان نے افغان طالبان کیساتھ اتحاد، آئندہ مشترکہ کارروائیاں کرنے کااعلان کردیا

  



لندن، پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک) کالعدم تحریک طالبان نے افغان طالبان کیساتھ اتحاد اورآئندہ مشترکہ کارروائیاں کرنے کا اعلان کردیاتاہم اس اتحاد سے متعلق افغان طالبان کاکوئی موقف سامنے نہیں آیا۔

بی بی سی کے مطابق تحریک طالبان کے مرکزی ترجمان محمد خراسانی نے میڈیا کو ای میل کے ذریعے جاری کردہ بیان میں افغان طالبان کے ساتھ اتحاد کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اس اتحادکا مقصد اپنے ہلاک شدہ ساتھیوں کا بدلہ لینے کے لیے مشترکہ کارروائیاں کرنا ہے اور نئے اتحاد کے بارے میں مشترکہ اعلامیہ جاری کیاجائے گا۔

خراسانی نے کہاکہ تحریک طالبان اور افغان طالبان کی مشترکہ جنگی مشقیں جاری ہیں اور ان کی ویڈیو جلد جاری کی جائے گی۔

رپورٹ کے مطابق محمد خراسانی نے نئے اتحاد کو ’چند صحافتی عناصر‘ سمیت اپنے مخالفین کے لیے جواب قرار دیا ہے۔یہ اعلان ایک ایسے وقت پر سامنے آیا ہے جب افغان طالبان قندوز جیسی بڑی کارروائیاں کرنے میں مصروف ہیں۔

بی بی سی نے پاکستانی حکام کے حوالے سے بتایاکہ پاکستانی طالبان افغانستان میں موجود ہیں لہٰذا مقامی طالبان سے اس قسم کی معاہدہ ان کے لیے ضروری بھی تھااور یہ اتحاد شاید افغانستان تک ہی محدود رہے۔افغان طالبان کو اس اتحاد سے یہ فائدہ متوقع ہے کہ پاکستانی طالبان ان علاقوں میں موجود ہیں جہاں دولت اسلامیہ خراسان بھی ہے۔ لہٰذا اس معاہدے سے افغانستان کے مشرقی علاقوں ننگرہار اور شمال میں کنڑ اور نورستان میں افغان طالبان کی پوزیشن مستحکم ہو گی۔

مزید : بین الاقوامی


loading...