ترکی نے قیامت برپا کردی، ایک ہی حملے میں 200 سے زائد مارڈالے، یہ داعش کے کارکن نہ تھے بلکہ۔۔۔

ترکی نے قیامت برپا کردی، ایک ہی حملے میں 200 سے زائد مارڈالے، یہ داعش کے کارکن ...
ترکی نے قیامت برپا کردی، ایک ہی حملے میں 200 سے زائد مارڈالے، یہ داعش کے کارکن نہ تھے بلکہ۔۔۔

  

دمشق(مانیٹرنگ ڈیسک) ترک افواج شام میں کرد باغیوں اور دیگر شدت پسندوں کے خلاف برسرپیکار ہیں۔ گزشتہ روز ترک بمبار طیاروں نے شمالی شام میں کرد جنگجوﺅں کے ٹھکانوں پر بمباری کی اور ایک ہی حملے میں 200جنگجوﺅں کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ سی این این کی رپورٹ کے مطابق ترکی کا امریکہ کے اتحادی کرد جنگجوﺅں پر اب تک کا یہ سب سے بڑا حملہ ہے۔

کرد جنگجوﺅں کے نمائندے کا کہنا تھا کہ ”ترک طیاروں نے بدھ کی رات کو بمباری کی۔ اس وقت جنگجو داعش کے شدت پسندوں کے خلاف لڑتے ہوئے افرین شہر کے قریب پیش قدمی کر رہے تھے۔افرین شام کے شہر حلب ے 40کلومیٹر دور ترکی کے بارڈر کے قریب واقع ہے۔

چین کو امریکہ کے خلاف بڑی کامیابی مل گئی

ترکی کی اس بمباری میں ہلاکتوں کی متضاد اطلاعات سامنے آ رہی ہیں۔ ترکی کا کہنا ہے کہ اس کی بمباری سے 160سے 200کرد جنگجو ہلاک ہوئے ہیں جبکہ ترکی کی کردش پولیٹیکل پارٹی ایچ ڈی پی کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ صرف 14ہلاکتیں ہوئی ہیں جن میں 4عام شہری بھی شامل تھے۔

مزید :

بین الاقوامی -