ملکی سیاست کے لیے نومبر کا مہینہ فیصلہ کن ثابت ہو گا،حامد رضا

ملکی سیاست کے لیے نومبر کا مہینہ فیصلہ کن ثابت ہو گا،حامد رضا

  

لاہور(خبر نگا رخصوصی)سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ ملکی سیاست کے لیے نومبر کا مہینہ فیصلہ کن ثابت ہو گا۔احتساب کے بغیر انتخابات کا کوئی فائدہ نہیں۔عشرت العباد کا الطاف کو محسن کہنا غداری ہے۔عشرت العباد کو گورنر کے عہدے سے ہٹایا جائے۔سپریم کورٹ کاوزیراعظم کو نوٹس جاری کرناخوش آئندہے۔عدلیہ پانامہ لیکس مقدمہ کا فیصلہ میرٹ پر کرے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے لاہور میں مختلف اہلسنّت رہنماؤ ں سے ملاقاتوں کے دوران گفتگوکرتے ہوئے کیا۔صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ پنجاب میں کالعدم تنظیموں کے خلاف نمائشی اور کاغذی کاروائی کی جاتی ہے۔جنوبی پنجاب کالعدم تنظیموں کا گڑھ بن چُکا ہے۔کراچی اور فاٹا کے مفرور دہشت گرد پنجاب میں پناہ لے چکے ہیں اس لیے پنجاب میں رینجر ز کو فری ہینڈ دیکر آپریشن کیا جائے۔صاحبزادہ حامد رضا نے کہا کہ سنی اتحاد کونسل آئندہ الیکشن میں بھرپور حصہ لے گی۔

کارکنان ابھی سے الیکشن کی تیاریاں شروع کر دیں۔تحریک انصاف کو احتجاج کے لیے فری ہینڈ ملناچاہیے۔حکومت غیر جمہوری ہتھکنڈوں سے اپوزیشن کی آواز کو دبا نہیں سکتی۔سیاسی کارکنوں کو نہیں کرپٹ حکمرانوں کو جیلوں میں ڈالنا چاہیے۔جنہیں جیلوں میں ہونا چاہیے تھا وہ اقتدار کے ایوانوں میں بیٹھے ہیں۔کرپٹ افراد کا احتساب نہ ہوا تو آئندہ الیکشن میں بھی چند خاندان کرپشن کی کالی دولت سے انتخابات کو اغوا کر لیں گے۔صاحبزادہ حامد رضا نے کہا اقوام متحدہ کی قرار دادوں پر عمل کرنے سے ہی مسئلہ کشمیر حل ہو گا ۔ کشمیری بھارتی فوج کی گولیوں کے جواب میں پاکستانی پرچم لہراتے اور پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگاتے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -