عمران خان کے 2نومبر کے دھرنے سے کوئی نتیجہ نہیں نکلے گا، میاں مقصود احمد

عمران خان کے 2نومبر کے دھرنے سے کوئی نتیجہ نہیں نکلے گا، میاں مقصود احمد

  

لاہور(انٹرویو،میاں اشفاق انجم،تصاویر،ایوب بشیر)جماعت اسلامی پنجاب کے امیر میاں مقصود احمد نے روزنامہ پاکستان سے خصوصی انٹرویو میں کہا ہے کہ جماعت اسلامی پنجاب کا 28سے30اکتوبر کو وحدت روڈ کرکٹ گراونڈ میں ہونے والا ارکان امیدواران کا تاریخی اجتماع نوید انقلاب ثابت ہو گا عمران خان کے2نومبر کے دھرنے سے کوئی نتیجہ نہیں نکلنے والا نہیں البتہ دھڑے بندی اور نفرتوں کی سیاست کو فروغ مل سکتا ہے میاں نواز شریف کو اپنے آپ کو احتساب کے لیے پیش کرنا چاہیے بد قسمتی سے ہمارے موجود حکمرانوں کا ہدف عوام نہیں اور نہ ان کو درپیش مسائل ہیں ان کا ٹارگٹ بڑے منصوبے ہیں ہم موجودہ حکمرانوں کی طرز حکومت سے کسی صورت متفق نہیں ہیں عوام مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں نہ انہیں گھروں میں تحفظ ہے نہ تھانوں سے۔میاں مقصود احمد نے کہا ہے موجودہ حکومت کو مدت پوری کرنا چاہیے عمران خان کو بھی پارلیمنٹ میں اپنا کردار ادا کرنا چاہیے ،امیر صوبہ پنجاب نے کہا 30سالوں سے کراچی کو لاشوں کا تحفہ دینے والے منطقی انجام کو پہنچ رہے ہیں ،مصطفی کمال اور عشرت العباد دونوں مہرے ہیں ان کا اپنا کوئی کردار نہیں جیسا ان کو کہا جاتا ہے ویسا ہی کرتے ہیں دونوں کو 260لوگوں کے خون کا حساب لینے اور حکیم سعید شہید کے خون کا انتقام لینے کا خیال اب آیا ہے۔جب ان کے ذاتی کردار بے نقاب ہونے لگے ہیں دوسروں کے ایجنڈوں پر کام کرنے والوں کا انجام ہمیشہ یہی ہوتا ہے ایم کیو ایم نے تو کراچی جیسے روشنیوں کے شہر کو لسانیت کی بھینٹ چڑھایا اب خود آپس میں لڑ رہے ہیں ،جماعت اسلامی کے مئیر کی خدمات کا اعتراف کر رہے ہیں۔میاں مقصود احمد نے جنرل راحیل شریف کی مدت ملازمت میں توسیع کے حوالے سے کہا میں تو کسی بھی سرکاری ملازم کی مدت میں توسیع کے حق میں نہیں ہوں ،انہوں نے کہا اگلا الیکشن جماعت اسلامی اپنے انتخابی نشان اور اپنے منشور کے مطابق لڑے گی،اس کے لیے بڑے پیمانے پر تیاریاں شروع کر دی گئی ہیں اگلے الیکشن میں جماعت اسلامی بڑی قوت بن کر سامنے آئے گی،امیر جماعت اسلامی پنجاب نے کہا کہ جماعت اسلامی ملک کے اندر خیر کی ایسی قوت ہے جو پاکستان اور اسلام کے لیے وقف ہے لوگوں کو معاملات زندگی میں ہمارے فیصلوں سے اختلافات ہو سکتا ہے الحمد للہ بہت بڑی اکثریت جماعت اسلامی کے ماضی اور حال بنیاد پر متفق ہے جماعت اسلامی نے ہمیشہ پاکستان کی نظریاتی بنیادوں کا تحفظ کیا ہے اہل پاکستان کو جب بھی آزمائش آئی تو جماعت اسلامی کے کارکنان کو اپنے ساتھ شانہ بشانہ پایا جماعت اسلامی نے سوشلزم کے خلاف طویل جدوجہد کی ہے ،70کی دہائی میں لازوال جدوجہد اور قربانیوں کی وجہ سے سوشلزم کا نعرہ ہمیشہ کے لیے دفن ہو گیا ہے ،آج پھر ملک میں الحاد اور لادنیت کے پرستا ر سر گرم عمل ہیں وطن عزیز کی نظریاتی شناخت پر حملہ آور ہو رہے ہیں حالانکہ اسلام اس ملک کا مقدر ہے اور اس کی نظریاتی اساس ہے،حکومتوں کو اسلامی نظریاتی اساس کے تحفظ کے لیے کردار ادا کرنا چاہیے مگر افسوس ایسا نہیں ہو رہا ،ذرائع ابلاغ بھی طاغوتی قوتوں کا آلہ کار بن چکا ہے ان حالات میں جماعت اسلامی پھر اپنے ماضی کی سنہری روایات کو زندہ کرے گی، فحاشی عریانی کے سیلاب کے آگے پُل باندھے گی جماعت اسلامی اپنے ارکان اور امیدواران کو نئی صف بندی کے لیے 28سے30اکتوبر کو وحدت کالونی گراونڈ میں 3روزہ تنظیمی و تربیتی اجتماع کر رہی ہے آخری روز بڑا جلسہ کریں گے اس تاریخی پروگرام میں ملکی بین الاقوامی شخصیات کے علاوہ معروف دانشور،صحافی خطاب کرے گے امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق کا خصوصی خطاب ہو گا اور اہم اعلان کریں گے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -