معروف نجی ہوٹل کا پرمٹ کی آڑ میں شراب فروشی کا دھندہ

معروف نجی ہوٹل کا پرمٹ کی آڑ میں شراب فروشی کا دھندہ

  

ملتان(وقائع نگار)ملتان کے مصروف نجی ہوٹل کی انتظامیہ کی ملی بھگت کے باعث غیرقانونی طور پر شراب فروشی کا دھندہ دھڑے سے جاری ہے محکمہ ایکسائز اور ضعلی پولیس شراب خریدنے والے پر مقدموں کی بوچھاڑ کرنے لگے جبکہ غیرقانونی شراب فروخت کرنے والے افراد پر کارروائی کرنے کی بجائے انکی جانب سے آنکھیں بند کرلیں ہیں اس بارے میں معلوم ہوا ہے کہ ملتان کے نام پر شراب محکمہ ایکسائز کے اہلکاروں کے زیرنگرانی فروخت کرنے کا ڈرامہ رچایا جارہا ہے لیکن حقائق اس کے برعکس ہے(بقیہ نمبر12صفحہ12پر )

محکمہ ایکسائز اور پولیس منتھلیاں لیکر شراب کے غیرقانونی کام کو پروان چڑھارہے ہیں قانون کے مطابق عیسائی مذہب کے شخص کو ایکسائز کی جانب سے پرمنٹ ملنے کے بعد پینے کیلئے دی جاتی ہے مگر پولیس اور محکمہ ایکسائز افسران کی ملی بھگت کے باعث شراب کو غیرقانونی طور پر فروخت کردیتے ہیں اور پھر ان کو اپنے ناجائز مقاصد کو حاصل کرنے کیلئے پکڑ لیتے ہیں اگر مقاصد پورے نہ ہوں تو ان شراب خریدنے والوں کے خلاف مقدمہ درج کردئیے ہیں جبکہ پولیس اور محکمہ ایکسائز نے شراب فروخت کرنے والوں کے خلاف کوئی کارروائی نہ کی ہے عوامی و سماجی حلقوں نے شراب غیرقانونی فروخت کرنے والوں کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -