بجلی اور گیس کی بندش، گھریلو امور اور کاروبار ٹھپ، چولہے ٹھنڈے پڑ گئے

بجلی اور گیس کی بندش، گھریلو امور اور کاروبار ٹھپ، چولہے ٹھنڈے پڑ گئے

  

ملتان ، وہاڑی ، کوٹ ادو ( سٹاف رپورٹر228نمائندگان)بجلی اورگیس کی بدترین لوڈ شیڈنگ دورانیہ 18گھنٹے سے تجاوز گھریلو امور ٹھپ ہوگئے ، گھروں میں کھانے پکنامشکل ، بچے بھوکے پیٹ اداروں کو جانے لگے، بڑوں کی زندگی بھی عذاب میں ، تاجر برادری ہاتھ پر ہاتھ دھرے بیٹھ گئی۔ملتان سے سٹاف رپورٹر کے مطابق ملتان سمیت میپکو ریجن میں لوڈشیڈنگ کا نہ تھمنے والا سلسلہ جاری ہے ‘ گزشتہ روز بھی 18گھنٹے تک لوڈشیڈنگ کی گئی ‘ وولٹیج کی کمی اور ٹرپنگ کا سلسلہ بھی جاری رہا‘ مختلف علاقوں میں نماز جمعتہ المبارک کے اوقات میں بھی بجلی بند کی گئی جس کے باعث نمازیوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا‘ نواحی علاقوں میں بجلی کی فراہمی نہ ہونے کے برابر رہی جس کے باعث گھروں اور مساجد میں پانی ختم ہو گیا‘ مختلف علاقوں میں عوام نے حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے۔وہاڑی سے بیورو رپورٹ اورتحصیل رپورٹر کے مطابق بجلی اور گیس کی بدترین لوڈشیڈنگ جاری بجلی کی لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 14گھنٹے سے تجا وزکرگیا ، معمولات زندگی درہم برہم ہوکررہ گئے شہریوں محمد شفیق ، ارسلان ، کاشف ، محمد عا مر، ساجدہ بی بی ، طاہر ہ پی پی ، شمیم اختر، زرینہ بی بی اور دیگر کاکہنا ہے کہ بجلی کی لوڈشیڈنگ سے پہلے ہی شہری پریشان تھے تاجر سے لے کر مزدور تک روز گار متا ثر ہونے کی وجہ سے معا شی مشکلات کا شکار تھے کہ اب گیس کی لوڈشیڈنگ بھی شروع ہو گئی جس سے گھروں کے چولہے ٹھنڈے ہو گئے ہیں شہریوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ بجلی گیس کی لوڈشیڈنگ کا فوری خاتمہ کیا جا ئے۔کوٹ ادو سے نامہ نگار کے مطابق بجلی و گیس کی غیر اعلا نیہ لو ڈ شیڈنگ نے کا ر و با ر زند گی مفلو ج کر دیا ہے ۔گھر وں میں کھانا پکا نے کے اوقات میں گیس کی جبری لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ مزید بڑھ گیا ہے ،بچے سکول ،دفتری وکا روباری شہری ناشتے کے بغیر جا نے لگے کھانے کے اوقات میں گیس رات کو سو نے کے اوقات میں اور دن کو کا م کے اوقات میں بجلی کی لو ڈ شیڈنگ نے زند گی اجیرن بنا دی ہے ،شہر یو ں محمد رمضان بھٹہ،طا رق علی غوری، محمد افضل بھٹہ اور ستا ر خرادیہ نے کہا ہے کہ دن کے وقت بجلی نہ ہو نے سے گا ہک اپنے کا م کر وائے بغیر لو ٹ جا تے ہیں ،اور ہم بھی کچھ کما ئے بغیر گھر وں کو خا لی ہا تھ لو ٹ جا تے ہیں،اس مہنگائی کے دور میں اپنا اور بچو ں کا پیٹ پا لنا ویسے ہی بہت مشکل ہو تا جا رہا ہے اوپر سے رہی سہی کسر واپڈ لو ڈشیڈنگ کر کے پو ری کر دیتا ہے،شہر یوں نے کہا کہ کو ٹ ادو میں کیپکو پا ور ہا ؤ س کا شما ر دینا کے بڑے بجلی گھر وں میں ہو تا ہے لیکن، چر اغ تلے اند ھیر ا ، کی مثال کی طر ح پو ر شہر لو ڈ شیڈ نگ کے عذ اب میں مبتلا رہتا ہے ،اور کہا کہ ہم صو بائی اور وفا قی حکو مت سے اپیل کر تے ہیں کہ ہمیں جلد از جلد اس مصیبت لو ڈ شیڈنگ سے چھٹکارہ دلائے۔

بجلی گیس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -