5ارب روپے کی لاگت سے356چھوٹے پن بجلی گھروں کے منصوبوں پر کام جاری ہے، عاطف خان

5ارب روپے کی لاگت سے356چھوٹے پن بجلی گھروں کے منصوبوں پر کام جاری ہے، عاطف خان

  

مردان (بیورورپورٹ)صوبائی وزیر تعلیم توانائی و برقیات محمد عاطف خان نے کہاہے کہ صوبے سے اندھیروں کے خاتمہ کے لئے پانچ ارب روپے کی لاگت سے 356چھوٹے پن بجلی گھر کے منصوبوں پر کام جاری ہے جس میں 107کے قریب مکمل کئے جاچکے ہیں جس سے عوام کو بلاتعطل 24گھنٹے بجلی مہیا کی جارہی ہے ۔ وہ صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی کے26کے تحصیلد ار کورونہ سری بہلول میں 35لاکھ روپے کی لاگت سے 30کلو واٹ پن بجلی گھر کے منصوبے کی سنگ بنیاد رکھنے کے موقع پر تقریب سے خطاب کر رہے تھے ۔تقریب سے ڈیڈک کمیٹی کے چےئرمین ایم پی اے افتخار علی مشوانی،پیڈو کے چیف ایگزیکٹو اکبر ایوب خان نے بھی خطاب کیا جبکہ اس موقع پر ایم پی اے زاہد درانی سیکرٹری توانائی و برقیات انجینئر نعیم خان ،تحصیل مردان کے ناظم محمد ایوب خان ،ضلعی کونسلرز انجینئر عادل نواز،شیر بھادر خان،سعید خان تحصیل کونسلر ایاز صافی ،الیاس طورو اور دیگربھی موجود تھے۔محمدعاطف خان نے کہا کہ 356پن بجلی گھر منصوبوں سے صوبے کے ساڑھے تین لاکھ لوگوں کو بجلی کی مفت سہولت میسر آئے گی ۔صوبائی حکومت نے ساڑھے تین سال میں 1200میگا واٹ بجلی کے منصوبوں پر کام شروع کیا ہے اور حکومت کی مدت مکمل ہوتے ہی صوبے سے اندھیروں کا خاتمہ ہو جائیگا۔انہوں نے کہا کہ ماضی میں پانچ سال حکومت کا حصہ رہنے والوں نے اپنے دور میں 56میگا واٹ بجلی کے منصوبے شروع کئے اور تحریک انصاف کی صوبائی حکومت نے ساڑھے تین سال میں 12سو میگا واٹ منصوبوں پر کام شروع کر رکھا ہے ۔انہوں نے کہا کہ چترال،دیر ،سوات اور کالام میں ایک سو سات چھوٹے پن بجلی گھر مکمل کئے جاچکے ہیں جس سے ایک لاکھ سے زاہد لوگوں کو بجلی کی بلا تعطل فراہمی جاری ہیں ۔ نئے مالی سال کے بجٹ میں 700مزید پن بجلی گھر وں کے لئے فنڈز رکھے جائیں گے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ مردان میں اربوں روپے کے منصوبوں پر کام جاری ہیں۔تین ارب روپے کی لاگت سے پی کے 26میں ملکی نوعیت کے پہلے گرلز کیڈٹ کالج کا سنگ بنیاد اور ایک ارب روپے کی سپیشل اپ لیفٹ پروگرام پر بھی کا م کا آغازجلد ہو گا۔انہوں نے کہا کہ مردان میں33کروڑ روپے کی لاگت سے بین الاقوامی معیار کے سپورٹس کمپلیکس ،30کروڑ روپے کی لاگت سے گرلز ماڈل سکول پر کام کا آغاز ہو گیا ہے اور ایک سال کے اندر وہ بھی مکمل ہونگے۔مردان میں پارک کے لئے تین سو کنال اراضی لی گئی ہے جس کا سنگ بنیاد بھی آئندہ ماہ رکھا جائیگا ۔مردان میں وومن یونیورسٹی نے کام شروع کر دیا ہے اور اب یونیورسٹی کے لئے اراضی کے حصول میں بعض لوگ رکاوٹیں کھڑی کررہے ہیں ان سے گزارش ہے کہ عوام کے فلاح و بہود اور مردان کی ترقی کے لئے صوبائی حکومت کا ساتھ دیں۔انہوں نے کہا کہ احتساب کے لئے وہ ہر وقت حاضر ہے ۔عوام کا پیسہ عوام پر خرچ کر رہے ہیں۔ہم نے مردان کے ترقی کی قسم اٹھائی ہے اور مردان کی ترقی کی خاطر کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔اس موقع پر صوبائی وزیر کو بریفنگ دیتے ہوئے پیڈو کے چیف ایگزیکٹو اکبر ایوب نے کہا کہ اس منصوبے پر 35لاکھ روپے لاگت آئے گی اور یہ منصوبہ چار ماہ میں مکمل ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ اس منصوبے سے 30گھروں،دکانوں ایک سکول اور ایک بی ایچ یو کو 24گھنٹے بلا تعطل مفت بجلی فراہم ہو گی۔

مزید :

پشاورصفحہ اول -