عائشہ ممتاز کی پنجاب فوڈاتھارٹی سے ’لمبی چھٹی‘کے پیچھے چھپی اصل کہانی سامنے آگئی

عائشہ ممتاز کی پنجاب فوڈاتھارٹی سے ’لمبی چھٹی‘کے پیچھے چھپی اصل کہانی ...
عائشہ ممتاز کی پنجاب فوڈاتھارٹی سے ’لمبی چھٹی‘کے پیچھے چھپی اصل کہانی سامنے آگئی

  

لاہور (نعیم مصطفی سے)صوبائی دارالحکومت سمیت پنجاب بھر میں عوام کو ناقص اور مضر صحت اشیائے خوردونوش فراہم کرنے والوں کے خلاف کھلی جنگ کرنے والی عائشہ ممتاز کو محکمہ خوراک کے ایک اعلیٰ افسر کی پسند ناپسند میں رکاوٹ بننے کی پاداش میں عہدے سے رخصت لینا پڑی۔ دلیر خاتون سرکاری افسر کو پہلے تو مختلف ہیلے بہانوں سے تنگ کیا گیا پھر اس انداز سے عہدہ چھوڑنے پر مجبور کیا گیا کہ اسے لمبی رخصت لینا پڑی۔

روزنامہ پاکستان کو ملنے والی تفصیلات کے مطابق پنجاب فوڈ اتھارٹی کی ڈائریکٹر آپریشنز عائشہ ممتاز گزشتہ دو تین سال سے لاہور سمیت پنجاب کے مختلف شہروں میں ناقص اور مضر صحت اشیائے خوردونوش فروخت کرنے والوں کے خلاف نبردآزما تھیں۔ انہوں نے اس دوران سینکڑوں بڑے بڑے ہوٹل، ریسٹورنٹ، ٹک شاپس، فاسٹ فوڈ کانرز، فیکٹریاں، کارخانے اور دکانیں بھی سیل کیں جس کے عوض کروڑوں روپے قومی خزانے میں جمع بھی ہوئے لیکن گزشتہ کچھ عرصے سے ایک مخصوص لابی ان کے خلاف سرگرم عمل ہوگئی اور ملاوٹ و بلیک میلنگ مافیا نے ان کے خلاف اعلیٰ سطح پر شکایات کا سلسلہ شروع کردیا۔ اس دوران عدالت عالیہ سمیت مختلف فورمز پر تحقیقات بھی شروع ہوئیں۔ مافیا کامیاب نہ ہوا تو لاہور میں تعینات رہنے والے ایک ڈی سی او جو بعدازاں ڈی سی او فیصل آباد بھی رہے کو لاہور لاکر محکمہ خوراک کا سربراہ تعینات کردیا گیا۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

عائشہ ممتاز نے لاہور میں بااثر شخصیات کے دو ریسٹورنٹ ناقص خوراک کی فراہمی پر سربمہر کئے تو فوڈ ڈیپارٹمنٹ کے مذکورہ سربراہ سیخ پا ہوگئے اور انہوں نے نہ صرف عائشہ ممتاز کی سرزنش کی بلکہ دونوں ریسٹورنٹ بغیر کسی جرمانے کے ڈی سیل بھی کردئیے۔ اس کے بعد بھی فوڈ اتھارٹی کی بعض کارروائیوں پر انہوں نے اختیارات کا استعمال کیا اور ٹیموں کی طرف سے بند کئے گئے فوڈ پوائنٹس کسی ضابطے اور قانون کے بغیر ہی کھول دئیے۔ عائشہ ممتاز نے اس حوالے سے اعلیٰ حکام کو شکایات کیں تو جواب ملا کہ آپ کے خلاف بہت بڑی لابی سرگرم عمل ہے۔ کچھ لوگ نہیں چاہتے کہ آپ مزید خدمات انجام دیں۔ عافیت اسی میں ہے کہ آپ عہدے سے از خود مستعفی ہوجائیں۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

عائشہ ممتاز نے اس صورتحال سے زِچ ہوکر لمبی رخصت کی درخواست دے دی جسے اعلیٰ حکام نے چند لمحوں میں ہی منظور کرکے عائشہ ممتاز کو 104دن کی رخصت پر بھجوادیا۔ عائشہ ممتاز کی درخواست رخصت موصول ہونے کے چند ہی لمحوں بعد محکمہ خوراک کے سربراہ نے فیصل آباد میں اپنے ماتحت کام کرنے والی گریڈ 17 سی اسسٹنٹ کمشنر رافعیہ حیدر کو پنجاب فوڈ اتھارٹی کا ڈائریکٹر آپریشنز تعینات کروادیا۔ اس حوالے سے عائشہ ممتاز کے قریبی ذرائع کا کہنا ہے کہ ہمارے معاشرے میں دھوکہ بازاور عوام پر ظلم کرنے والوں کا راج ہے، بھلائی کے کام اور قانون کی عملداری کروانے والوں پر عرصہ حیات تنگ کردیا

جاتا ہے۔ میڈم دلبرداشتہ ہوکر گھر بیٹھ گئی ہیں لیکن انہوں نے جو خدمات انجام دی ہیںان پر وہ فخر کرتی ہیں۔

مزید :

لاہور -