شاہ سلمان کا صدر اوباما کے لئے ایسا مہنگا ترین تحفہ کہ ماضی کے ریکارڈ ٹوٹ گئے

شاہ سلمان کا صدر اوباما کے لئے ایسا مہنگا ترین تحفہ کہ ماضی کے ریکارڈ ٹوٹ گئے
شاہ سلمان کا صدر اوباما کے لئے ایسا مہنگا ترین تحفہ کہ ماضی کے ریکارڈ ٹوٹ گئے

  

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی صدر باراک اوباما نے 2015ءمیں خلیجی ممالک کے رہنماﺅں کی طرف سے ملنے والے تحائف کی فہرست جاری کر دی ہے۔عریبین بزنس کی رپورٹ کے مطابق ان تحائف میں ہیرے جواہرات سے سجا، سونے اور چاندی سے بنا گھوڑے کا ایک مجسمہ، سونے کے بنے دوبرڈ کلاک میکانزم اور ایک تلوار بھی شامل ہیں۔ تلوار کا دستہ سونے اور سیپیوں کا بنا ہوا ہے۔فہرست میں بیان کیے گئے تمام تحائف باراک اوباما نے امریکی حکومت کے حوالے کر دیئے تھے کیونکہ کوئی بھی حکمران یا افسر سرکاری سطح پر ملنے والے تحائف اپنے پاس نہیں رکھ سکتا۔

رسول اللہﷺ کے دست مبارک پر مسلمان ہونے والے جنّ کانعتیہ قصیدہ،مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گھوڑے کا مجسمہ باراک اوباما کو سعودی فرماں روا شاہ سلمان نے ستمبر 2015ءمیں دیا تھا۔ گھوڑے کا مجسمہ سونے اور چاندی کی پلیٹوں سے بنا ہوا ہے اور اسے کئی طرح کے ہیروںسے سجایا گیا ہے۔اس گھوڑے کی مالیت 5لاکھ 23ہزار ڈالر(تقریباً 6کروڑ روپے) ہے۔ امریکی محکمہ داخلہ کے مطابق باراک اوباما کو گزشتہ برس ملنے والے تحائف میں یہ سب سے مہنگا تحفہ تھا۔

سونے کے 2برڈ کلاک قطر کے امیر شیخ تمیم بن حماد کی طرف سے دیئے گئے جن کی مالیت 1لاکھ 10ہزار ڈالر(تقریباً 1کروڑ 10لاکھ روپے) ہے۔ یہ دوسرا مہنگا ترین تحفہ تھا جو گزشتہ سال باراک اوباما کو ملا۔ اس کے علاوہ ابوظہبی کے شہزادہ ولی عہد شیخ محمد بن زید النیہان کی طرف سے 1ہزار 40ڈالر کی پینٹنگ،عمان کے نائب وزیراعظم سید فہد بن محمد کی طرف سے لگژری کافی سیٹ، امیر کویت شیخ صباح الاحمد الجبیر کی طرف سے 42ہزار ڈالر کا چاندی سے بنا اونٹ کا مجسمہ بھی باراک اوباما کو گزشتہ برس تحفے میں ملا۔ دیگر کئی خلیجی رہنماﺅں کی طرف سے بھی گزشتہ سال باراک اوباما کو انتہائی مہنگے تحائف دیئے گئے۔

مزید :

عرب دنیا -