آئی ایم ایف سے قرضہ لینا کوئی جرم یا گناہ نہیں : آفتاب شیر پاؤ

آئی ایم ایف سے قرضہ لینا کوئی جرم یا گناہ نہیں : آفتاب شیر پاؤ

  

تنگی (نمائند ہ پاکستان)قومی وطن پارٹی کے صوبائی چیئرمین سکندر حیا ت خان شیرپاؤ نے کہاہے کہ پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان نے آئی ایم ایف سے قرضہ لینے سے خودکشی کو ترجیح قرارد دیا تھا لیکن اب وزیر اعظم بننے کے بعد کشکول لیکر پھر رہے ہیں اور یہ جواز بناکر کہہ رہے ہیں کہ آئی ایم ایف سے قرضہ لینا کوئی جرم یا گناہ تو نہیں ۔پی ٹی آئی کے 100دن پورے ہوگئے لیکن عوام کو سہولیات دینے کے بجائے عوام پر مہنگائی کے بم گرائے جارہے ہیں ۔پی ٹی آئی کو حکومت چلانے کی اہلیت ہی نہیں ملک دیوالیہ بنتا جارہا ہے یہ باتیں انہوں نے گزشتہ روز وطن کور شیرپاؤ میں پارٹی کے یوم تاسیس حوالے سے پارٹی تنظیموں کے عہدیداروں کے بلایا گیا اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیں ۔اس موقع قومی وطن پارٹی کے رہنماء مفتی افتخار ،جاویدحسین خان ،ڈسٹرکٹ ممبر حاجی امیر رحمن خان ،نثار خان مندنی ودیگر بھی موجود تھے ۔سکندر شیرپاؤ نے تحصیل تنگی کے تنظیمو ں کے عہدیداروں کو سختی سے ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ کارکنان پارٹی کیلئے ریڑھ کی ہڈی جیسے حیثیت رکھتے ہیں اور تنظیم سازی کا عمل جلد مکمل کراکے ا چھے اورسنجیدہ کارکنان کو عہدے دے ۔ ہم پر یہ زمہ داری عائد ہوتی ہے کہ ہم اپنے عوام کی صحیح ترجمانی کرکے انکے حقوق کے حصول کیلئے ہر میدان پر آواز بلند کریں ۔ ا نہوں نے حکومت پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پی ٹی آئی والوں نے نیا پاکستان بنا کر ملک سے مہنگائی کا ہمیشہ کیلئے خاتمہ کردیا ۔بجلی گیس اور پیٹرولیم مصنوعات کے قیمتوں میں واضح کمی کردی ۔اشیاء خور دنوش کی قیمتیں کم ہوگئے لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کردیا گیا ۔حکومت عوام کو ریلیف دینے میں مکمل طور پرناکام ہو چکی ہے ۔حکومت کے وزراء نے گزشتہ حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ مہنگائی میں اضافہ حکومت کی نااہلیت ہوتی ہے اور آج یہ سب کچھ ان کیساتھ ہورہا ہے ۔ پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان نے آئی ایم ایف سے قرضہ لینے سے خودکشی کو ترجیح قرارد دیا تھا لیکن اب وزیر اعظم بننے کے بعد بھیک مانگ رہا ہے آج ان کو کوئی ملک قرضہ کیلئے تیار نہیں ۔قومی وطن پارٹی اپنے عوام کو ان کے رحم وکرم پرنہیں چھوڑے گے ۔ ہم مہنگائی ،بے روزگاری اور غریب عوام کیساتھ حکومتی ناانصافی کے خلاف ہر پلیٹ فارم پر آواز اٹھاتے رہیں گے۔قومی وطن پارٹی کے پاس ملک کو معاشی بدحالی سے نکالنے کا حل موجود ہے اور ہم ملک وقوم کو ترقی اور خوشحالی کی راہ پر گامزن کریگا ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -