ملک دشمن سرگرمیوں میں ملوث تعلیمی اداروں کو بند کیا جائے،مفتی قاسم فخری

ملک دشمن سرگرمیوں میں ملوث تعلیمی اداروں کو بند کیا جائے،مفتی قاسم فخری

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ اسمبلی میں تحریک لبیک پاکستان کے پارلیمانی لیڈر مفتی قاسم فخری نے لمز لاہور کے متنازع پروفیسر تیمور رحمان اور طلبہ کی جانب سے قادیانیوں سے اظہار یکجہتی کے خلاف سندھ اسمبلی میں بیک وقت قراردادِ مذمت، توجہ دلاؤ نوٹس اور تحریک التواء جمع کرانے کا اعلان کردیا۔ مفتی قاسم فخری نے مزید کہا کہ لاہور یونیورسٹی آف مینجمنٹ سائنسز (لمز) کے طلبہ کی جانب سے منکرین ختم نبوت سے اظہار یکجہتی اور ان کے مرکز ربوہ کا دورہ پاکستان کی نظریاتی سرحد پر حملے کے مترادف ہے۔ ایلیٹ کلاس کے لیے مخصوص بعض مہنگے تعلیمی ادارے ملک دشمن سرگرمیوں کا مرکز بن چکے ہیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز بلدیہ ٹاؤں میں اپنے عوامی رابطہ دفتر میں مفتی مبارک عباسی کے زیرِ قیادت علماء و مشائخ کے وفد سے ملاقات میں کیا۔ مفتی قاسم فخری نے مزید کہا کہ پوش علاقوں میں موجود غیر ملکی نصاب پڑھانے والے تعلیمی اداروں کی مشکوک سرگرمیوں پر نظر رکھی جائے اور ملک دشمن سرگرمیوں میں ملوث تعلیمی اداروں کو فوری بند کیا جائے۔ غیر ملکی نصاب پڑھانے والے ادارے لبرل ازم اور سیکیولر ازم کی آڑ میں کفروالحاد کی ترویج و اشاعت کررہے ہیں اور پاکستانی معاشرے کو مزید تقسیم کررہے ہیں۔ تحریک لبیک پاکستان اقلیتوں کا تحفظ چاہتی ہے لیکن اقلیتوں کے حقوق کی آڑ میں ملک کی نظریاتی سرحدوں پر حملوں کی اجازت نہیں دی جاسکتی، بتایا جائے کہ قادیانیوں سے اظہاریکجہتی کے معاملے میں لمز یونیورسٹی کی انتظامیہ کا آفیشل موقف کیا ہے؟تحریک لبیک پاکستان پارلیمان کے اندر بھی اور باہر بھی پاکستان کی نظریاتی سرحدوں کا دفاع کرے گی۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -