ضمنی الیکشن میں اسلام اباد سے ووٹ ڈالنے آئی ہوں، شیری رحمان

ضمنی الیکشن میں اسلام اباد سے ووٹ ڈالنے آئی ہوں، شیری رحمان

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پیپلز پارٹی کی رہنما سینیٹر شیری رحمان نے کہا ہے کہ ضمنی انتخاب ایسے ہی ہوتا ہے،ووٹ ڈالنا جمہوری حق ہوتا ہے،میں اسلام اباد سے ووٹ ڈالنے آئی ہوں ۔ قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 247 اور پی ایس 111 میں ووٹ کاسٹ کرنے کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ ان الیکشن کی تحقیقات کرنی ہے۔رینجرز کے اہلکار بندوق تان کر ساتھ پیچھے آئے۔اہلکاروں نے سیلفی لینے کی کوشش کی لیکن میں نے منع کردیا۔جب ہمارا کیمرا منع ہے تو کسی اور کو بھی اجازت نہیں ہونی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ تشویشناک ہے۔گیس استعمال کرنے والے صارفین بہت ہیں ۔605فیصد اضافہ بہت زیادہ ہے۔لوگوں کے لئے ریلیف سوچنا چاہئے تھا ۔اسے ظلم کہتے ہیں کیونکہ چودہ فیصد اضافہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ نظریہ اور سیاست چھوڑیں کوئی سوچ ہی نہیں ہے۔روٹی غریب کہاں سے خریدے گا۔التجا کروں گی، مہربانی کرکے سوچیں غریب کہاں جائے گا ۔اسٹاک مارکیٹ تباہ ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ادویات کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوا اور ہول سیل مارکیٹ بند ہوگئیں ۔بیس ہزار دو سو سے تجاوز کرے گی قیمت جو پہلے تین ہزار دیتے تھے ۔انتشار پھیلانے والی صورتحال ہے۔مجھے بھی روکا جارہا تھا ۔عام آدمی تو سوچے گا کہ اندر جایا جائے یا نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ دھاندلی تو ہوچکی جس کے لئے پارلیمانی کمیٹی اب بنائی جارہی ہے۔ اٹھارویں ترمیم کو واپس کرنے کی اجازت نہیں دیں گے ۔ان حالات کا کس کو نہیں پتا تھا کہ اقتصادی اور معاشی بحران تھا ملک میں تو حکومت نے کیا پلاننگ کی ۔انہوں نے کہا کہ اشرافیہ کو صرف نوازا جارہا ہے۔نہ سینیٹ نہ قومی اسمبلی کا سیشن چلایا جاتا ہے۔گالم گلوچ کا ماحول بنایا گیا ہے

مزید :

کراچی صفحہ اول -